2روز سے راستوں کی بندش ،ہزاروں طلبہ داخلہ فارم جمع کرانے سے محروم

2روز سے راستوں کی بندش ،ہزاروں طلبہ داخلہ فارم جمع کرانے سے محروم

                          لاہور(سروے، ایجوکیشن رپورٹر)صوبائی دارالحکومت میں یوم شہداءکیلئے دو روزسے شہر بھر کو سیلکرنے کے باعث میٹرک میں کامیاب ہونے والے امیدوار گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے جبکہ انٹرمیڈیٹ کے داخلوں میں توسیع نہ ہونے کے باعث ہزاروں کی تعداد میں طلباءسرکاری کالجز میں فارم جمع کروانے سے محروم ہو گئے یوم شہداءکے موقع پر شہر بھر میں رکاوٹیں کھڑی کر دی گئی تھیں جسکے باعث امیدواروں کی تعلیمی اداروں تک رسائی ناممکن بن گئی جبکہ پہلے ہی لاہور کے 47 سرکاری کالجز میں فسٹ ائیر کی ناکافی سیٹوں کے باعث میٹرک کے سالانہ امتحانات میں کامیاب ہونے والے طلباءکی کثیر تعداد داخلوں سے محروم ہوگئی مہنگائی کے دور میں اپنے بچوں کو نجی کالجوں میں پڑھانے سے پریشان والدین کا شدید احتجاج تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال لاہور کے 1لاکھ 35ہزار کے قریب طلباءمیٹرک کے سالانہ امتحانات میں کامیاب ہوئے جبکہ 50ہزار کے قریب طلباءسرکاری کالجز میں تعلیم حاصل کرنے میں کامیاب ہو پائے رواں برس بھی کم و بیش 1لاکھ طلباءپبلک کالجز کا پبلک کالجز میں محروم رہیں گے میٹرک کے سالانہ امتحانات کے نتائج کا اعلان ہوتے ہی صوبائی دارالحکومت کے سرکاری و نجی کالجز نے فسٹ ائیر میں داخلے کےلئے انتظامی تیاریاں تیز کر دیں، نجی تعلیمی اداروں نے عمارتوں کی تزئین و آرائیش سمیت مہنگے پراسپیکٹس بنانے شروع کر دیئے ہیں جنکا اثر بچوں کے داخلہ اور سالانہ فیسوں پر پڑے گاہر سال بڑی تعداد میں طلباءسرکاری کالجز میں میرٹ میں اضافے کے باعث داخلے سے محروم ہو جاتے ہیں جبکہ میرٹ پر پورا نہ اترنے والے اور ضمنی امتحانات دینے والے امیدوار پبلک تعلیمی اداروں میں علم حاصل کرنے سے قاصر ہو جاتے ہیں جبکہ نجی کالجز و گلی محلے کا اکیڈمی مافیا طلباءکی مجبوری کا فائدہ اٹھانے میں سبقت لے جاتے ہیںتفصیلات کے مطابق رواں سال ہونے والے میڑک کے امتحانات میں 2لاکھ 10ہزار کے قریب امیدواروں نے حصہ لیا اور 1لاکھ24ہزار سے زائد طلباءکامیاب ہو سکے جبکہ مجموعی طور پر کامیابی کا تناسب 66.94فیصد رہاصوبائی دارالحکومت میں واقع 47سرکاری کالجز میں صبح اور شام کی شفٹ میں 50ہزار کے قریب طلباءداخلہ لینے میں کامیاب ہو سکے جبکہ باقی طلباءنے نجی تعلیمی اداروں کا رخ کیا جبکہ رواں سال 1لاکھ24ہزار کامیاب ہونے والے میڑک کے طلباءکے لئے سرکاری کالجز میں صرف 45ہزار کے قریب فرسٹ ائیر کی سیٹیں رکھی گئی ہیں اس حوالے سے والدین کا کہنا ہے کہ محکمہ تعلیم کو یوم شہداءکے باعث کالجز میں داخلہ فارم جمع کروانے کی تاریخ میں توسیع کرنی چاہیے تھی اور حکومت پنجاب کو سرکاری کالجز کی حالت بہتر بناتے ہوئے فسٹ ائیر کی سیٹوں میں اضافہ کرنا چاہیے جبکہ آبادی میں اضافے کے باعث سرکاری کالجز کی تعداد کو بڑھانا وقت کی ضرورت ہے محکمہ تعلیم کی عدم توجہ کے باعث سرکاری کالجز میں اساتذہ ،آئی ٹی لیبز سمیت لیباٹریز میں کمی ہونے کے باعث طلباءکو تعلیمی سہولیات میں رکاوٹ کا سامنا ہے ترجمان محکمہ ہائر ایجوکیشن کا کہنا ہے کہ اساتذہ کی کمی کو دور کرنے اور معیار تعلیم کو بہتر بنانے کے لئے لاہور سمیت صوبہ بھر کے پبلک کالجز میں 1478لیکچرارز بھرتی کرنے کا فیصلہ کیاگیا ہے جو پنجاب پبلک سروس کمیشن کے تحت بھرتی کئے جائیں گے محکمہ ہائیر ایجوکیشن کی طرف سے مذکورہ بھرتیوں سے سرکاری کالجز میں تدریسی عوامل میں واضح بہتری آئے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...