امریکی طیاروں کی ”اسلامی ریاست“ کے دہشتگردوں کے ٹھکانوں پر بمباری جاری

امریکی طیاروں کی ”اسلامی ریاست“ کے دہشتگردوں کے ٹھکانوں پر بمباری جاری

 واشنگٹن(اظہر زمان، بیورو چیف) شمالی عراق میں امریکی طیاروں کی ”اسلامی ریاست“ کے دہشتگردوں کے ٹھکانوں پر بمباری آج بھی جاری رہی۔ پینٹاگون کی اطلاع کے مطابق یہ کارروائیاں کرد فوج کے مرکز اربل کے قریب دہشتگردوں کے ٹھکانوں پر کی جا رہی ہیں۔ ریگولر اور ڈرون طیاروں کے ذریعے ہونے والے تازہ حملے میں کردوں کے خلاف پوزیشن سنبھالے ہوئے چار مسلح ٹرک اور ایک توپ خانے کو تباہ کر دیا گیا ہے۔ پینٹاگون کا کہنا ہے کہ اس کارروائی کا مقصد کرد فوج کو تحفظ فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ اربل میں موجود امریکہ کے سرکاری عملے اور سویلین کو بچانا بھی ہے۔موصل پر ”اسلامی ریاست“ کے جنگجوﺅں کے قبضے کے بعد قریبی علاقے سے ایزدی عقیدے کے ہزاروں افراد نے سنجار کی پہاڑی چوٹی پر پناہ لی تھی جنہیں جنگجوﺅں نے تمام طرف سے حصار میں لے لیا تھا۔ اس وجہ سے یہ پناہ گزین خوراک اور پانی کی قلت کا شکار ہو رہے تھے۔ ان پناہ گزینوں کے لئے امریکی طےارے خوراک اور پانی فضا سے پھینک رہے تھے۔ پینٹا گون کے مطابق خوراک کی چوتھی کھیپ بھی آج تقسیم کر دی گئی ہے۔ آج خوراک کے 88بنڈل اور چھ سوگیلن پانی گرایا گیا۔ اس طرح اب تک 74ہزار کھانے اور پندرہ ہزار گیلن سے زائد پینے کا صاف پانی محصور ین کو سپلائی کیا جا چکا ہے۔

حملے

مزید : صفحہ آخر