وزیر اعظم جمہوریت بچانا چاہتے ہیں تو آزادی مارچ ہونے دیں، جو بات ہو گی 14 اگست کو ہو گی :عمران خان

وزیر اعظم جمہوریت بچانا چاہتے ہیں تو آزادی مارچ ہونے دیں، جو بات ہو گی 14 اگست ...
وزیر اعظم جمہوریت بچانا چاہتے ہیں تو آزادی مارچ ہونے دیں، جو بات ہو گی 14 اگست کو ہو گی :عمران خان

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کا خطاب میرے لئے بے مقصد ہے اور اب جو بھی بات ہو گی وہ14اگست کو ہوگی،وزیر اعظم جمہوریت بچانا چاہتے ہیں تو آزادی مارچ کرنے دیں اور پرامن احتجاج ہونے دیں،اسلام آباد میں ہمارے مطالبات سنے جائیں اور ان پر عمل کیا جائے۔دنیا نیوز کے پروگرام میں انٹرویو کے دوران عمران خان نے کہا کہ نواز شریف حلقے کھولنے سے کیوں ڈر رہے تھے،کونسا قانون کہتا ہے کہ ہمیں انصاف نہ دیا جائے ان کی جگہ میں ہوتا تو خود کہتا کہ حلقے کھولے اور ووٹوں کی تصدیق کرائی جائے ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نواز شریف استعفیٰ دیں اور سپریم کورٹ الیکشن کے لئے ایک بورڈ بنائے جو دھاندلی کی تحقیقات کے بعد نگران حکومت بنائے جو ٹیکنو کریٹس پر مشتمل ہو اور اس کے بعد الیکشن کرائے جائیں۔انہوں نے کہا کہ وہ مسلسل کہتے رہے کہ اگر عدالتوں سے انصاف نہ ملا تو وہ سڑکوں پر آئیں گے لیکن کسی پر کوئی اثر نہیں ہوا اب نواز شریف کو14ماہ بعد حلقے کھولنے یاد آئے ہیں۔افتخار چوہدری نے بھی مجھے دھوکا دیا،فافن کی رپورٹ ہے کہ11مئی کے بعد مزید بیلٹ پیپپر چھپائے گئے اور سیاہی اس لئے ٹھیک نہیں استعمال کی گئی تاکہ تصدیق نہ ہو سکے۔ایاز صادق کے حلقے میں ساڑھے8ہزار ووٹوں سے شکست ہوئی ۔ انہوں نے کہا کہ اسپتالوں کا نظام دیکھ لیں،پولیس میں گلو بٹ ہیں اورپاکستان میں انصاف حاصل کرنا انتہائی مشکل ہے۔نواز شریف پرامن طریقے سے جمہوریت کے تحت ہمیں احتجاج کرنے کا حق دیں،گارنٹی دیتا ہوں کہ کارکن پر امن رہیں گے اور ایک گملا نہیں ٹوٹے گا نہ ہی ملک میں مارشل لاءنہیں لگنے دیں گے۔میاں نواز شریف سے میری کوئی ذاتی لڑائی نہیں ہے حکومت خود کہہ رہی ہے کہ ہر حلقے میں60سے70ہزار ووٹ جعلی ہیں یہ کیسا الیکشن ہے،حکومت نے تسلیم کر لیا کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے تو الیکشن کرا دئیے جائیں،ہم ثبوت پر ثبوت پیش کر رہے ہیں کہ دھاندلی ہوئی۔آزادی مارچ روکنے کے لئے تمام راستے بند کر دئیے گئے ہیں لیکن جنون کو ان رکاوٹوں اور گرمی سردی سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔

مزید : قومی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...