چینی سائنسدانوں نے خود کش حملے روکنے کا حل نکال لیا

چینی سائنسدانوں نے خود کش حملے روکنے کا حل نکال لیا
چینی سائنسدانوں نے خود کش حملے روکنے کا حل نکال لیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

بیجنگ(نیوز ڈیسک)چینی سائنسدانوں نے خودکش بمبار کی نشاندہی کرنے والا خصوصی چشمہ تیار کر لیا ہے جس میں لگا منی کیمرہ لوگوں کے خون میں آکسیجن کی مقدار معلوم کر کے بتا دے گا کہ کونسا شخص خودکش بمبار ہو سکتا ہے۔ساﺅتھ ویسٹ یونیوسٹی کے پروفیسر شین ٹانگ کا کہنا ہے کہ خودکش بمبار اور اس قسم کے دیگر مجرم جب اپنے مشن پر نکلتے ہیں تو شدید ذہنی دباﺅ کا شکار ہوتے ہیں جس کی وجہ سے ان کے خون میں آکسجن کی مقدار بہت بڑھ جاتی، ان کا ایجاد کردہ خفیہ کیمرہ سینکڑوں لوگوں کے ہجوم کے چہروں یا ہاتھوں وغیرہ میں گردش کرتے خون میں آکسجن کی مواد کا اندازہ لگا کر سییکورٹی حکام کو بتا دے گا کہ کونسا شخص ممکنہ طور پر خطرناک ثابت ہو سکتا ہے۔پروفیسر شین کا کہنا ہے کہ جب کوئی سیکیورٹی اہلکار ان کے ایجاد کردہ آلے سے ہجوم پر نظر دوڑائے گا تو مشکوک لوگوں کے سر کے اوپر ان کے ذہنی دباﺅ کالیول نظر آئے گا اور ان کا چہرہ بھی عام لوگوں کے بر عکس سرخ نظر آئے گا۔انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ یہ آلہ مجرموں کو بروقت پکڑنے میں انتہائی مددگار ثابت ہو گا۔

مزید : بین الاقوامی