وہ بحری جہاز جس میں مجرموں کو قید کہا جاتا ہے

وہ بحری جہاز جس میں مجرموں کو قید کہا جاتا ہے
وہ بحری جہاز جس میں مجرموں کو قید کہا جاتا ہے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کیا آپ جانتے ہیں کہ دنیا کی ایک ایسی جیل بھی ہے جو ہر وقت سمندر میں تیرتی رہتی ہے؟جی ہاں امریکہ نے یہ جیل ایک بحری جہاز میں بنائی تھی جو تب سے لے کر سمندر میں تیر رہی ہے، جب کسی قیدی کو آزاد کرنا ہو یا پھر نئے قیدی اس جیل میں ڈالنے ہوں تو یہ جیل سمندرکنارے آ کر لنگر انداز ہوتی ہے اور قیدی اتار کر یا سوار کرکے دوبارہ کھلے پانیوں میں چلی جاتی ہے۔امریکہ میں 1980ء میں جیلیں قیدیوں سے بھر گئی تھیں اور ان میں نئے قیدیوں کی گنجائش نہیں رہی تھی، اس سے نیویارک انتظامیہ کے ذہن میں یہ بحری جہاز میں جیل بنانے کا خیال آیا۔ یہ جیل 1992ء سے آپریشنل ہے اور گینزبک آف ورلڈ ریکارڈ میں بھی اس جیل کا نام درج ہے۔ جہاز کے اوپرکے بائیں حصے میں درجنوں پنجرے بنائے گئے ہیں جن میں قیدی رکھے جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ کھلے ایریا میں کئی باسکٹ بال کورٹس بنائی گئی ہیں۔ بحری جہاز میں جیل بنانے کی ایک وجہ یہ بھی بیان کی جاتی ہے کہ نیویارک میں زمین کی قیمتیں آسمان کو چھورہی ہیں۔ جب باقی جیلوں میں گنجائش نہ رہی اور نئی جیل کے لیے زمین خریدنا بہت مہنگا پڑتا، انتظامیہ اس طرف راغب ہوئی۔ماہرین کہتے ہیں کہ جس تیزی کے ساتھ نیویارک میں زمین کی قیمتیں بڑھ رہی ہیں لوگ گھر بھی بحری جہازوں میں بنانے کو ترجیح دینے لگیں گے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -