بجلی کی قیمتوں میں اضافہ قبول نہیں: شاہ زیب اکرم

بجلی کی قیمتوں میں اضافہ قبول نہیں: شاہ زیب اکرم

  

لاہور(کامرس رپورٹر) سینئر چیئرمین فیروز پور روڈ انڈسٹریل ایسوسی ایشن خواجہ شاہ زیب اکرم وائس چیئرمین پیاف نے بجلی کی قیمتوں میں 2نئے سرچارج فنانشل کاسٹ سرچارج اور ٹیرف ریشنلائزیشن سرچارج کی مد میں بجلی کی فی یونٹ قیمتوں میں 3روپے تک اضافے کو صنعتکاروں پر بوجھ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ نئی انرجی پالیسی کے باعث صنعتی مقاصد کیلئے بجلی کی قیمتوں میں بے لگام اضافہ کے باعث پاکستان خطہ میں مہنگی ترین بجلی فراہم کرنے والا ملک بن گیا ہے ۔

پاکستان کی نسبت بھارت میں بجلی 100فیصد سستی جبکہ بنگلہ دیش میں بجلی 300فیصد سستی فراہم ہورہی ہے، مہنگی بجلی کے باعث پاکستان میں بننے والی اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ سے بیرون ملک پاکستانی مصنوعات کی مانگ میں کمی واقع ہورہی ہے پاکستان میں مہنگی ترین بجلی برآمدات میں کمی کا باعث بنے گی جس کی وجہ سے حکومت کے ریونیو میں بہت زیادہ کمی واقع ہوگی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے فیروز پور انڈسٹریل ایسوسی ایشن کے صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔خواجہ شاہ زیب نے کہا کہ کمرشل مقاصد کیلئے فی یونٹ3روپے اضافہ کے علاوہ بجلی بلوں میں ودھ ہولڈنگ ٹیکس، انکم ٹیکس اور دوسرے ٹیکسوں کے باعث پیداواری لاگت بڑھے گی، مصنوعات کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافہ سے مہنگائی بڑھے گی اور عوام کی قوت خرید میں کمی واقع ہوگی ،انہوں نے کہا کہ بجلی مہنگی کرنا مسائل کا حل نہیں سستی بجلی کے لیے حکومت پن بجلی کی طرف توجہ دے 60ہزا رمیگا واٹ بجلی پانی سے حاصل کی جاسکتی ہے جوصرف2روپے یونٹ پڑے گی اس لیئے حکومت مہنگی بجلی بنانے پر انحصا ر کم کرے۔اور بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کی بجائے کمی کی جائے ۔

مزید :

کامرس -