شدید حبس میں بجلی کی بد ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ،شہری سراپا احتجاج

شدید حبس میں بجلی کی بد ترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ،شہری سراپا احتجاج

  

 لاہور ( کامرس رپورٹر)پاکستان الیکٹر ک پاور کمپنی نے ملک میں بجلی کی پیداوار میں کمی کے باعث شدید حبس میں بدترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ شروع کر دیا گیااور غیر اعلانیہ لو ڈشیڈنگ کے باعث شہریو ں کی مشکلات میں اضافہ ہو گیا ہے ۔ پاور پلانٹس کو پی ایس او کی جانب سے فرنس آئل کی فراہمی میں کمی کے باعث پیداوار میں کمی ہوئی۔ دوسری جانب صوبائی دارالحکومت سمیت کئی شہروں میں ہونے والی بارشوں سے درجنوں فیڈرز ٹرپ ہو گئے ہیں۔ دوپہر کے وقت لیسکو کے چار گرڈ ٹرپ کر گئے جس سے بڑے علاقے میں بجلی کی فراہمی معطل ہو گئی ۔ پیداوار میں کمی کے باعث شارٹ فال سات ہزار میگا واٹ سے تجاوز کر گیا جس کی وجہ سے لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ بڑھا دیا گیا ۔ شہروں میں گزشتہ روز چودہ گھنٹے جبکہ دیہی علاقوں میں اٹھارہ گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی گئی رات کے وقت لوڈ بڑھنے پر ہر آدھے گھنٹے کے بعد ایک گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ بھی کی گئی ۔ گزشتہ روز شہر کے کئی علاقوں میں تیز بارش کے باعث لیسکو کے 22 فیڈرز ٹرپ کر گئے چار گرڈ سے بجلی کی فراہمی مکمل معطل ہو گئی جن چار گرڈ سے فراہمی معطل ہوئی ان میں شاہدرہ گرڈ ، رستم گرڈ ، باٹا پور گرڈ اور لیفو گرڈ شامل تھے ۔ انرجی مینجمنٹ سیل کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 20230 میگا واٹ جبکہ پیداوار 13130 میگا واٹ رہی طلب و رسد میں 7110 میگا واٹ کا فرق رہا ۔ذرائع کے مطابق پی ایس او نے حکومت کی جانب سے عدم ادائیگی کے باعث پاور پلانٹس کو تیل کی سپلائی میں کمی کر دی ہے دوسری جانب پی ایس او کی جانب سے وزارت بجلی و پانی کو ایک لیٹ خط بھی بھیجا گیا ہے جس میں انتباہ کیا گیا ہے کہ اگر فوری طور پر ادائیگی نہ ہوئی تو تیل کی سپلائی میں مزید کمی کر دی جائے گی ۔

لوڈ شیڈنگ

مزید :

صفحہ آخر -