پاکستان کا مظبوط و مستحکم ہونا بیرونی قوتوں کو برداشت نہیں ہو رہا،حافظ سعید

پاکستان کا مظبوط و مستحکم ہونا بیرونی قوتوں کو برداشت نہیں ہو رہا،حافظ سعید

  

 لاہور(نمائندہ خصوصی )نظریہ پاکستان رابطہ کونسل کے تحت 14اگست کو ملک بھر میں نظریہ پاکستان کارواں، جلسوں اور ریلیوں کا انعقاد کیاجائے گا۔ لاہور،گوجرانوالہ، فیصل آباد، ملتان، کراچی، کوئٹہ اور پشاور سمیت چاروں صوبوں و آزاد کشمیر میں ہونے والے پروگراموں میں قومی سیاسی‘ مذہبی و کشمیری قیادت شرکت کرے گی۔یوم آزادی کے حوالہ سے پورے ملک میں زبردست تشہیری مہم اور کیمپنگ کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔ پاکستان کا مطلب کیا‘ لاالہ الااللہ محمد رسول اللہ کا نعرہ ہر فرد کے ذہن میں پختہ کرنے کی ضرورت ہے۔بیرونی قوتوں کے مذموم عزائم ناکام بنانے کیلئے ملک میں اتحادویکجہتی کا ماحول پیدا کیاجائے گا۔سوموار کو جماعۃالدعوۃ پاکستان کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید کی زیر امارت مرکز القادسیہ میں جماعۃالدعوۃ کے مرکزی ذمہ داران کا ایک اجلا س ہوا جس میں پروفیسر ظفر اقبال، مولانا امیر حمزہ، مولانا سیف اللہ خالد، قاری محمد یعقوب شیخ،انجینئر نوید قمر،حافظ محمد مسعود، مولانا ابو الہاشم،محمد یحییٰ مجاہد، حافظ طلحہ سعید، حافظ خالد ولید و دیگرنے شرکت کی۔اس موقع پر لاہور سمیت دیگر شہروں میں ہونے والے نظریہ پاکستان کارواں، جلسوں اور ریلیوں کی تیاریاں و انتظامات کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس کے دوران جماعۃالدعوۃ لاہور کے مسؤل مولانا ابو الہاشم نے 14اگست کو صوبائی دارالحکومت لاہور میں ہونے والے نظریہ پاکستان کارواں کی تیاریوں کے حوالہ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایاکہ پروگرام کو کامیاب بنانے کیلئے شہر بھر کے مختلف مقامات سے مقامی ذمہ داران اور علماء کرام کی قیادت میں قافلے ترتیب دیے گئے ہیں جو ہزاروں شرکاء کے ہمراہ پہنچیں گے اور نظریہ پاکستان کارواں میں شریک ہوں گے۔ انہوں نے کہاکہ یوم آزادی کے سلسلہ میں بھرپور تشہیری مہم چلائی جارہی ہے۔ ہزاروں کی تعداد میں اشتہارات، بینرزاور ہورڈنگز لگائے گئے ہیں۔ اسی طرح کارکنان چوکوں و چوراہوں اور مساجدومدارس میں جاکر بھی لوگوں کو نظریہ پاکستان کارواں میں شرکت کی دعوت دے رہے ہیں جس پر لوگوں میں زبردست جو ش و خروش دیکھنے میں آرہا ہے۔ امیر جماعۃالدعوۃ حافظ محمد سعید نے لاہور میں ہونے والے نظریہ پاکستان کارواں کی تیاریوں و انتظامات پر اطمینان کا اظہار کیا اور یہ سلسلہ مزید تیز کرنے کی ہدایات جاری کیں۔ حافظ محمد سعید نے اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ وطن عزیز پاکستان کا مضبوط و مستحکم ہونا بیرونی قوتوں کو برداشت نہیں ہو رہا۔ ان حالات میں ضرورت اس امر کی ہے کہ نوجوان نسل کو دشمنان اسلام کی سازشوں اور نظریہ پاکستان کی ضرورت و اہمیت سے آگاہ کیاجائے تاکہ وہ دفاع پاکستان کیلئے چلائی جانے والی ملک گیر تحریک میں ہراول دستہ کا کردار ادا کرسکیں۔انہوں نے کہاکہ 1947ء کی طرح آج بھی پاکستان کے خلاف بھارتی سازشیں عروج پر ہیں۔ خاص طور پر نوجوان نسل میں بے دینی و بے حیائی پھیلا کر ان کے دل و دماغ سے غیرت و حمیت ختم کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔آج ایک بار پھر ملک میں قیام پاکستان والے جذبے پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔پاکستان کا مطلب کیا‘ لاالہ الااللہ محمد رسول اللہ کا نعرہ جس قدر مضبوط ہو گااتنا ہی یہ ملک مستحکم ہو گا۔ کلمہ طیبہ کی بنیاد پر ہی مسلمان متحد و منظم اور فرقہ واریت و لسانیت پرستی کے جھگڑے ختم ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ وطن عزیز پاکستان کے خلاف بیرونی سازشوں کے توڑ کیلئے احیائے نظریہ پاکستان مہم بہت بڑا کردار اداکرے گی۔ کارکنان قریہ قریہ ، شہرشہر جاکر لوگوں کو قیام پاکستان کے حقیقی مقاصد سے آگاہ کریں۔

مزید :

صفحہ آخر -