پاکستان ٹیکس ڈائریکٹری جاری کرنے والا دنیا کا چوتھا ملک، 4سال میں ٹیکس ادا کرنیوالوں میں 50فیصد اضافہ ہوا: اسحاق ڈار

پاکستان ٹیکس ڈائریکٹری جاری کرنے والا دنیا کا چوتھا ملک، 4سال میں ٹیکس ادا ...

اسلا م آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے ٹیکس ڈائریکٹری شائع کرتے ہوئے کہا ہے چار سال میں ٹیکس ادا کرنیوالوں میں تقریبا 50 فیصد اضافہ ہوا ہے، ٹیکس ڈائریکٹر ی شائع کرنے کا مقصد ٹیکس نیٹ کو بڑھانا ہے،دفاع،ترقیاتی پروگرام اور دو سرے کاموں کیلئے ٹیکس نیٹ اور محاصل میں اضافہ ضروری ہے۔گزشتہ روزایف بی آر ہاؤس اسلام آباد میں 2016 کی ٹیکس ڈائریکٹری کے اجراء کی تقریب سے خطاب میں وزیر خزانہ کا مزید کہنا تھا ٹیکس ڈائریکٹر ی 17ہزار صفحات پر مشتمل ہے،جو ایف بی آر کی ویب سائٹ پر آپ لوڈ کردی گئی ہے،یہ چوتھی ٹیکس ڈائریکٹر ی ہے،2013 میں ٹیکس دہندگان کی تعداد 7لاکھ 69ہزار892تھی جو 2016 میں بڑھ کر 12لاکھ 16ہزار 614 ہوگئی ہے، چار سال میں ٹیکس ادا کرنیوالوں میں تقریبا 50 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ ٹیکس ڈائریکٹر ی کی اشاعت سے لوگوں کی حوصلہ افزائی ہوگی پاکستان چوتھا ملک ہے،جس نے باقاعدہ ٹیکس ڈائریکٹر ی شائع کی ہے ،پارلیمنٹرین کی 2016 کی ڈائریکٹر ی پہلے ہی جاری کرچکے ہیں۔وفاقی وزیر خزانہ نے کہاان اقدامات کا مقصد ٹیکس کلچر کا فروغ اور شفافیت،کاروبار دوست پالیسیوں اور خوف و ہراس کے بغیر محاصل میں اضافہ کرنا ہے۔اسحاق ڈار نے کہا پچھلے سال جی ڈی پی 5,3فیصد رہی،رواں سال کا 6فیصد کا ہدف حاصل کریں گے۔2013 میں ٹیکس محاصل 1946ارب تھے،جو چار سال میں بڑھ کر3362ارب روپے ہوگئے ہیں ۔ 3362ارب پر پہنچنے کیلئے ٹیکس نیٹ میں اضافہ،بڑے طبقے کو حاصل مراعات،استثنیٰ ختم اور کئی دوسرے مشکل فیصلے کئے۔ ٹیکس چوری روکنے کیلئے سوئٹزرلینڈ سے دوطرفہ اور او ای سی ڈی کیساتھ کثیر الجہتی معاہدے کئے جس کی بدولت شفافیت یقینی اور کرپشن روکنے میں مدد ملے گی،ان معاہدوں کے ثمرات مستقبل قریب میں حاصل ہونگے۔

اسحاق ڈار

مزید : صفحہ آخر


loading...