بار اور بنچ تنازع‘ وکلاء کے ایک دوسرے پر تشدد‘ اغواء کے الزامات

بار اور بنچ تنازع‘ وکلاء کے ایک دوسرے پر تشدد‘ اغواء کے الزامات

ملتان(خبر نگار خصوصی)باروبینچ تنازعہ میں وکلاء کی جانب سے ایک دوسرے کیخلاف تشدداور ناز یبازبان استعمال کرنے کے الزامات عائدکئے ہیں۔اس ضمن میں گزشتہ روزبارروم میں احتجاجی اجلاس کے دوران ممبربارصفدرسرسانہ نے وکلاء کوبتایاکہ سابق جنرل سیکرٹری ہائیکورٹ بارنے وکلاء اجلاس میں سپورٹ نہ کرنے پر ان کے (بقیہ نمبر49صفحہ12پر )

ساتھ نازیباالفاظ استمعال کئے ہیں تاہم وہ معاملہ وکلاء پر چھوڑتے ہیں جس پر نعرے بازی کی گئی۔بعدازاں بارممبربارعمران بھٹہ کو وکلاء کی جانب سے تشددکا نشانہ بنانے کی اطلاع پر وکلاء اکٹھے ہوگئے اس موقع پر ہائیکورٹ بارکے سابق جنرل سیکرٹری شیخ غیاث الحق نے میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے بتایاکہ 10 سے 12 وکلاء انھیں ڈھونڈتے ہوئے ساتھی وکیل راناجاویداخترکی سیٹ پر آئے اورکہاکہ ان کے جونیئرعمران بھٹہ نے سوشل میڈیاپرایک ممبرپنجاب بارکونسل کے خلاف پوسٹ لگائی ہے اورجان سے مارنے کی دھمکیاں دیں اس موقع پر دیگر موجود وکلاء نے بیچ بچاؤ کرانے کی کوشش کی لیکن ان کے جونیئر عمران بھٹہ کو اغواء کرکے ساتھ لے گئے اورتشددکانشانہ بنایاہے جبکہ وہ وکلاء تحریک کے ساتھ ہیں اورتمام معاملات کا آئینی وقانونی طریقے سے حل چاہتے ہیں اس لئے تھانہ چہلیک میں مقدمہ درج کرنے کے لئے بھی درخواست دے دی گئی ہے

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...