مختلف اداروں کی جانب سے 288ارب روپے واجب الاد، پی ایس او مالی مشکلات میں گھر گیا

مختلف اداروں کی جانب سے 288ارب روپے واجب الاد، پی ایس او مالی مشکلات میں گھر ...

ملتان(جنرل رپورٹر)مختلف اداروں کی جانب سے عدم ادائیگی کی وجہ سے پاکستان اسٹیٹ آئل کی مالی مشکلا ت میں اضافہ ، مختلف اداروں کے ذمے پی ایس او کے 288ارب روپے سے زائد کے واجبات ،اداروں کی جانب سے واجبات کی مسلسل عدم ادائیگی کی وجہ سے پی ایس او کی مشکلات میں اضافہ ہو رہا ہے۔ پاور سیکٹر پی ایس ا و کا سب سے بڑا نادہندہ ہے جس نے پی ایس او کو 256 ارب روپے کی ادائیگیاں کرنی ہیں۔ بجلی کی پیدواری کمپنیوں کے (بقیہ نمبر45صفحہ12پر )

ذمے 147ارب سے زائد کے بقایاجات ہیں۔ حبکو نے پی ایس ا وکو68ارب 20کروڑ روپے جبکہ کوٹ ادوپاور کمپنی لمٹیڈنے 34ارب 70کروڑ روپے کی ادائیگیاں کرنی ہیں،پی آئی اے نے 15ارب 60 کروڑ روپے دینے ہیں حکومت سے پرائس ڈیفرنشل کلیمز کی مد میں پی ایس او کے واجبات 9ارب 60کروڑ روپے ہیں ،مالی مشکلات کے باعث پی ایس او کو ملکی اور غیر ملکی ریفائنریوں کو ادائیگیاں کرنے میں مشکلات پیش آرہی ہیں اور پی ایس او کے لیے ایل سیز کھولنے میں مشکلات پیش آ رہی ہیں۔ پی ا یس او نے مختلف ملکی وغیر ملکی اداروں کو 12ارب70 کروڑ روپے ادا کرنے ہیں جس میں سے پارکو کو 5ارب 20کروڑروپے، پاکستان ریفائنری لمیٹڈ کو 2ارب40کروڑ روپے، نیشنل ریفائزی لمیٹڈ کو ایک ارب روپے کی ادائیگی کرنی ہے۔دستیاب دستاویزات کے مطابق پی آئی اے بھی پی ایس او کا نادہندہے اور پی آئی اے نے 15ارب 60 کروڑ روپے دینے ہیں حکومت سے پرائس ڈیفرنشل کلیمز کی مد میں پی ایس او کے واجبات 9ارب 60کروڑ روپے ہیں موجودہ حکومت نے صنعتی سرگرمیوں کے فروغ کے لیے ایل این جی کی درآمد شروع کی تھی تاکہ صنعتی سرگرمیوں کو فروغ دیاجا سکے تاہم ناقص منصوبہ بندی کے باعث سوئی سدرن کے ذمے ایل این جی کے بقایاجات کی مد میں 6ارب 90کروڑ روپے کے بقایاجات ہیں۔مالی مشکلات کے باعث پی ایس او کو ملکی اور غیر ملکی ریفائنریوں کو ادائیگیاں کرنے میں مشکلات پیش آرہی ہیں اور پی ایس او کے لیے ایل سیز کھولنے میں مشکلات پیش آ رہی ہیں۔ دستاویز کے مطابق پی ا یس او نے مختلف ملکی وغیر ملکی اداروں کو 12ارب70 کروڑ روپے ادا کرنے ہیں جس میں سے پارکو کو 5.2ارب روپے، پاکستان ریفائنری لمیٹڈ کو 2.4ارب روپے، نیشنل ریفائزی لمیٹڈ کو ایک ارب روپے کی ادائیگی کرنی ہے۔واضح رہے کہ پی ایس او نے اٹک آئل ریفائنری کو 2.1ارب روپے، بائیکو کو 1.3ارب روپے اداکرنے ہیں۔ پی ایس او نے ایل سی، کے پی سی اور ایل این جی کی ادائیگیوں کی مد میں 65ارب 60 کروڑ روپے کی ادائیگی کرنی ہے۔

پی ایس او

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...