شیر گڑھ ،ڈی آئی جی مردان کے زیر صدارت امن وامان کے حوالے سے اجلاس

شیر گڑھ ،ڈی آئی جی مردان کے زیر صدارت امن وامان کے حوالے سے اجلاس

شیرگڑھ(نامہ نگار) ڈی آئی جی مردان ریجن محمد عالم شنواری کی صدارت میں مردان میں امن و امان اور سیکورٹی کے حوالے سے ایک اعلیٰ سطحی کرائم میٹنگ منعقد ہوئی میٹنگ میں ڈی پی او مردان ڈاکٹر میاں محمد سعید، ڈی پی او صوابی صہیب اشرف، ڈی پی او نوشہر ہ واحد محمود، ڈی پی او چارسدہ سہیل خالد، چاروں ایس پی انوسٹی گیشن صاحبان، سی ٹی ڈی افسران اور تمام سرکل ایس ڈی پی اوز نے شرکت کی امن و امان کے بارے میں تفصیلی بات چیت کے علاوہ تازہ حالات و واقعات کے بارے میں تبادلہ خیال بھی کیا گیا ڈی آئی جی نے پولیس افسران کو ہدایت کی کہ کارکردگی مزید بہتر کی جائے اور عوام کو پر امن ماحول فراہم کیا جائے انہوں نے مختلف جرائم کی روک تھام اور مجرمان کی گرفتاری کو یقینی بنانے کے لئے افسران کوکاروائیاں مزید تیز کرنے کے احکامات بھی جاری کئے انہوں نے کہا کہ اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کے لئے کمپین شروع کی جائے جس میں اچھی کارکردگی دکھانے والے افسر ان کی حوصلہ افزائی کی جائے گی جبکہ ناقص کارکردگی دکھانے والوں کی حوصلہ شکنی کی جائے گی میٹنگ کے دوران تمام پولیس افسروں کو ہدایت کی گئی کہ موجودہ ملکی حالات کے پیش نظر تمام تھانوں، چوکیوں اور دفاتر ہائے کے علاوہ دہشت گردوں کے لئے آسان اہداف مثلاً سکول، کالج، ہسپتال اور نجی و سرکاری اداروں اور دفاتر پر سکیورٹی کو مزید سخت کی جائے موک ریہرسل باقاعدگی سے ترتیب دی جائے او ر اپنے ماتحت سٹاف کو حفاظتی تدابیر مزید سخت کرنے کی ہدایت کی جائے میٹنگ کے دوران تمام سرکل ڈی ایس پیز کی کارکردگی کا بغور جائزہ لیا گیا ڈی آئی جی مردان ریجن نے تمام پولیس افسروں کو ہدایت کی کہ وہ اپنے اپنے علاقے میں قیام امن اور لوگوں کے جان و مال کے تحفظ اور جرائم کی بیخ کنی کے سلسلے میں اپنے فرائض منصبی نہایت احسن طریقے سے سر انجام دیں تاکہ علاقے میں امن کی فضا قائم رہیں اور عوام کا پولیس پر اعتماد قائم رہے آر پی او مردان نے اس بات پر زور دیا کہ موجودہ حالات کے مطابق اپنی حفاظت کو یقینی بنایا جائے انوسٹی گیشن افسران کو ہدایات دیتے ہوئے ڈی آئی جی مردان نے کہا کہ افسران انوسٹی گیشن سٹاف کے ساتھ ہفتہ وارمیٹنگ ترتیب دیں اور جدید حالات کے مطابق ٹریننگ دی جائے ڈی پی او صاحبان کو پولیس اسسٹنتس لائنز کا اچانک دورہ کرنا وہاں کا ریکارڈ چیک کرنے اور سائلین سے موقع پر ان کی مشکلات کے بارے میں خود کو آگاہ کرنے کے احکامات بھی دیئے گئے

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...