میرٹ کی بالادستی میں آر ٹی آئی کا قانون کلیدی کردار ادا کر رہا ہے :عظمت اور کزئی

میرٹ کی بالادستی میں آر ٹی آئی کا قانون کلیدی کردار ادا کر رہا ہے :عظمت اور ...

پشاور( سٹاف رپورٹر) خیبر پختونخوا کے سرکاری اور عوامی اداروں میں شفافیت کو یقینی بنانے اور اقربا پروری کے خاتمہ اور میرٹ کی بالادستی کویقینی بنانے میں آر ٹی آئی کا قانون کلیدی کردار ادا کر رہا ہے۔ چیف انفارمیشن کمشنرچیف انفارمیشن کمشنر عظمت حنیف اورکزئی نے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا کے سرکاری اور عوامی اداروں میں شفافیت کو یقینی بنانے اور اقربا پروری کے خاتمہ اور میرٹ کی بالادستی کویقینی بنانے میں آر ٹی آئی کا قانون کلیدی کردار ادا کر رہا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے نوشہرہ میں ضلع مردان اور ضلع نوشہرہ کے پبلک انفارمیشن آفیسرز کی تربیتی نشست سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اِس تربیتی نشست میں مذکورہ دونوں اضلاع کے پچاس سے زائد سرکاری افسران نے شرکت کی ۔چیف کمشنر نے کہا کہ موجودہ حکومت نے 100سے زائد قوانین اسمبلی سے منظور کروائے ہیں ۔جن میں رائٹ ٹو سروسز ایکٹ 2014 249 Prevention of Conflict of Interest Act 249 Whislte Blower Protection Act 249 اور رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ 2013 شامل ہیں۔اِن قوانین کے لاگو ہونے کا بنیادی مقصد عوام کی سرکار ی امور میں شرکت کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ اداروں میں میرٹ کی بالا دستی اور افسران میں خود احتسابی کو یقینی بنانے اور احساسِ ذمہ داری کو پروان چڑھانا ہے۔انہوں نے کہا کہ آر ٹی آئی قانون کا اصل مقصد اداروں کی کارکردگی کو بہتر بنانا اور ان اداروں کی کارکردگی سے متعلق عوام کو معلومات کے حصول کو ممکن بنانا ہے۔ انہوں نے سرکاری افسران کو تاکید کی کہ عوام کی طرف سے موصول شدہ آر ٹی آئی درخواستوں پر بروقت کاروائی کی جائے تا کہ حصول معلومات میں عوام کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ واضح رہے کہ ابتک آر ٹی آئی کے قانون کے تحت سرکاری اداروں کو 10ہزار سے زائد د درخواستوں پر عوام کو معلومات فراہم کی گئی ہیں جبکہ آر ٹی آئی کمیشن نے ابتک 3000سے زائد شکایات پر بروقت کاروائی کرتے ہوئے عوام کو معلومات فراہم کی ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...