انجمن کاشتکاران کا 16 اگست کی تحریک کی حمایت کا اعلان

انجمن کاشتکاران کا 16 اگست کی تحریک کی حمایت کا اعلان

مردان ( بیورورپورٹ)انجمن کاشتکاران خیبرپختون خوانے تمباکو کے معاملے پر کسان بورڈکے16اگست کی احتجاجی تحریک کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے ٹوبیکو بورڈ کو اجرتی قاتل قراردیاہے اور خبردارکیاہے کہ اگر تمباکو ریٹ پرنظرثانی نہ کی گئی تو اگلے سال سے وہ تمباکو کی بجائے افیون کاشت کریں گے مردان پریس کلب میں ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے انجمن کاشتکاران خیبرپختون خوا کے سینئر نائب صدرنعمت شاہ روغانی ،صوبائی جنرل سیکرٹری عالم شیرخان ،سید ابدال باچہ ،قمرزمان ایڈوکیٹ ،نوررحمان اورمحمد امین خان نے دیگر کاشتکاررہنماؤں کے ہمراہ ٹوبیکو بورڈ پر الزامات کی بارش کرتے ہوئے بتایاکہ ٹوبیکو بورڈ کاشتکاروں اور زمینداروں کے بجائے ملٹی نیشنل کمپنیوں کی تحفظ کررہاہے انہوں نے کہاکہ کاشتکاروں سے تمباکو خریداری میں لیت ولعل سے کام لینے لیاجارہاہے اور اوران کے معاشی قتل عام کے لئے6سے زائد پرچیئرز سنٹر بند کردیئے گئے ہیں کاشتکاررہنماؤں نے بتایاکہ ٹوبیکو کمپنیاں تخم ،کھاد اور دیگر زرعی ضروریات کے نام پر ان کی ادائیگیوں سے کٹوتیاں کررہی ہیں انجمن کاشتکاران کے عہدیداروں نے کہاکہ ٹوبیکو بورڈ اجرتی قاتل بن گیاہے اور معاشی قتل عام کرکے کاشتکاروں پر عرصہ دراز تنگ کردیاگیاہے نہوں نے کاشتکاروں کے مسائل کے حل کے لئے کسان بورڈ کی طرف سے15اگست تک کی ڈیڈ لائن کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ وہ کسان بورڈ کے ساتھ شانہ بشانہ لڑکر مسائل کے حل کے لئے جدوجہد کریں گے اور اپنے مسائل کے حل کے لئے آخری حد تک جائیں گے انہوں نے مزید کہاکہ مردان ،چارسدہ اور صوابی کے نرخ دیگر اضلاع کے برابر لائے جائیں اور آئندہ سال سے موجودہ نرخوں پر نظر ثانی کی جائے بصورت دیگر وہ تمباکو کی بجائے افیون کاشت کرنے پر مجبورہوجائیں گے انہوں نے کہاکہ اس وقت مردان ڈویژن کے کاشتکاروں کے پاس 70فیصد تمباکو گودام میں پڑی ہے اوران سے لینے والا اکوئی نہیں جبکہ تمباکو کاشتکاروں کو پے منٹ کے لئے تین ماۃ کا وقت دیاجارہاہے جو معاہدے کی خلاف ورزی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...