شپنگ اور لوجسٹکس سے متعلق مسائل جلد حل ہونگے، میر حاصل بزنجو

شپنگ اور لوجسٹکس سے متعلق مسائل جلد حل ہونگے، میر حاصل بزنجو

کراچی (اسٹاف رپورٹر) ملک میں درآمدات اور برآمدات کو سہل بنانے کے لیے موثر نظام وقت کی اہم ضرورت ہے، جس پر لائحہ عمل زیرغور ہے، گارگو کی صنعت کوبین الاقوامی سطح کی اسکیننگ کی مدد سے بڑھایا جاسکتا ہے، وہ گزشتہ روز کراچی کے مقامی ہوٹل میں 7ویں سسٹین ایبل شپنگ ، لوجسٹکس اینڈ سپلائی چین کے عنوان سے منعقدہ کانفرنس سے خطاب کررہے تھے، اپنے خطاب میں انھوں نے نہ صرف شپنگ اور لوجسٹکس سے متعلق مسائل کے حل کی یقین دہانی بھی کرائی بلکہ انھوں نے بزنس کمیونٹی سے بھی ان کے مسائل کے ممکنہ حل کے لیے مشاورت طلب کی ہے۔ اس موقع پر انھوں نے بندرگاہ کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے سمندر کو آلودگی سے پاک رکھنے پر بھی زور دیا، جبکہ وزارت پورٹ اینڈ شپنگ کانام منسٹری آف میری ٹائم رکھنے کا بھی مشورہ دیا۔ تقریب سے پاک بحریہ کے ڈپٹی چیف ،وائس ایڈمرل سید عارف اللہ حسینی ، سندھ بورڈ آف انویسٹمنٹ ناہید میمن، پی این ایس سی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر بریگیڈیئر راشد صدیقی، آئی سی سی پاکستان کے چیئرمین طارق رنگون والا، ہوم پیک فریٹ کے صدر و چیف ایگزیکٹو آفسیر اے ہاشم، ڈائریکٹر سپلائی چین گیٹس فارما محمد حنیف اجاری سمیت دیگر معروف اسپیکرز نے خطاب کیا۔ دی پروفیشنلز نیٹ ورک کے فاؤنڈر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر محمود ترین نے کانفرنس کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ کانفرنس کے انعقاد کا مقصد شپنگ اور لوجسٹکس کو پیش آنے والے مسائل کا مشترکہ طور پر حل تلاش کرنا اور اس پر عملدرآمد کے لیے لائحہ عمل پیش کرنا ہے جس میں کانفرنس اپنا کردا ر بھرپور طریقے سے ادا کررہی ہے، آج کی اس تقریب میں سپلائی چین سے تعلق رکھنے والے اداروں کی شرکت اس کی عکاس ہے، اس موقع پر انھوں نے کانفرنس کے تمام شرکاء کا شکریہ بھی ادا کیا۔ کانفرنس کے آخر میں پی این ایس سی، اے پی ایل لوجسٹکس، ایمریٹس لوجسٹکس، یونی شپ پاکستان، سرل پاکستان، اییشیورٹی کنسلٹنگ سمیت 9سپلائی چین کمپنیز کو ایوارڈز بھی دیئے گئے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...