نواز شریف شور کرنے کی بجائے بتائیں کون سازش کر رہا ہے ؟ڈکٹیٹر کے سارے وزیر ن لیگ میں ہیں ،مشرف کو بھی اپنی پارٹی میں شامل کر لیں:سینیٹر سراج الحق

نواز شریف شور کرنے کی بجائے بتائیں کون سازش کر رہا ہے ؟ڈکٹیٹر کے سارے وزیر ن ...
نواز شریف شور کرنے کی بجائے بتائیں کون سازش کر رہا ہے ؟ڈکٹیٹر کے سارے وزیر ن لیگ میں ہیں ،مشرف کو بھی اپنی پارٹی میں شامل کر لیں:سینیٹر سراج الحق

  


جھنگ(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ نوازشریف سازش کا شور بھی مچاتے ہیں لیکن بتاتے بھی نہیں کہ ان کے خلاف کون سازش کر رہاہے ؟ نوازشریف کو توبہ کر کے قوم سے معافی مانگنی چاہیے ، انہیں نااہلی کے فیصلے کے بعد فیصل مسجد جاکر شکرانے کے نفل پڑھنے چاہیے تھے کہ وہ جیل جانے کے بجائے گھر جارہے ہیں ، ہم سپریم کورٹ سے سب کے احتساب کا مطابہ کرتے ہیں، ہم چاہتے ہیں کہ مشرف ، زرداری حکومتوں کا بھی فوری احتساب ہو نا چاہیے ، پرویز مشرف کے سارے وزراءمسلم لیگ ن کی حکومت میں ہیں ، صرف مشرف بچا ہے اسے بھی بلا کر حکومت میں شامل کر لیں ، 62-63 کو ختم کرنے کے لیے لٹیروں کا ٹولہ متحد ہو رہاہے لیکن کوئی مائی کا لال اس کو ختم نہیں کر سکتا ، سرکاری عہدوں پر فائز لوگوں کو دیانتدار ہوناچاہیے ، بدعنوان اقتدار کے ایوانوں میں نہیں اڈیالہ جیل میں بند ہونے چاہئیں ۔

 جھنڈ بھروانہ جھنگ میں بڑے عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئےسینیٹر سراج الحق نے کہاکہ دو فیصد اشرافیہ نے 98 فیصد عوام کو یرغمال بنا رکھاہے ، جاگیردار ، وڈیرے ، سرمایہ دار ملک کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں ، وہ کہتے ہیں کہ نظام کو خطرہ ہے اسے سب مل کر بچائیں گے ،  میں پوچھتاہوں کہ کمیشن ،کرپشن اور رشوت کے نظام کو بچانے کے لیے تو سب ایک ہو رہے ہیں ، عوام کو بھی اب ان کے خلاف متحد ہو جاناچاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ آج آزادی کے 70 سال بعد بھی ملک پرانگریز کے وفادار اور آلہ کار مسلط ہیں، سودی نظام اور انگریزوں کے قانون کے خلا ف لاکھوں جانوں کی قربانی دے کر آزادی حاصل کی گئی لیکن آج بھی انگریز کا ہی نظام پاک سرزمین پر رائج ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ملک و قوم کے 375 ارب ڈالر بیرون ملک کے بینکوں میں پڑے ہیں ، یہ قومی دولت واپس آجائے تو عوام کو تعلیم ، صحت سمیت زندگی کی تمام سہولتیں مفت میسر آ سکتی ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ نوازشریف کہتے ہیں کہ مجھے سی پیک بنانے کی سزا دی گئی ہے حالانکہ سی پیک کے خلاف تو بھارتی وزیراعظم مودی ہیں اور مودی کے ساتھ آپ کی دوستی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ میں سٹیٹس کو کے ظالمانہ نظام کے خاتمے کے لیے آخری دم تک لڑنے کا عہد کرچکاہوں، میں جھونپڑیوں میں روشنی اور بچوں کے ہاتھوں میں قلم و کتاب دیکھنا چاہتاہوں ، نوجوانوں کو روزگار اور بے گھر کو اس کے لیے گھر کی چھت دیکھنا چاہتاہوں ۔

مزید : قومی


loading...