" شریف خاندان کی جائیدادیں ضبط کرلیں گے اگر ۔۔۔" حکومت نے اعلان کردیا

" شریف خاندان کی جائیدادیں ضبط کرلیں گے اگر ۔۔۔" حکومت نے اعلان کردیا

  


اسلام آباد (ویب ڈیسک)وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہراد اکبر کہتے ہیں کہ شریف خاندان کے کیسوں کا فیصلہ آنے کے بعد اگر انہوں نے پیسہ واپس نہ کیا تو ان کی جائیدادیں ضبط کی جائیں گی۔سماءنیوز کے مطابق معاون خصوصی برائے احتساب نے کہا کہ شریف فیملی کے کیسوں میں انہوں نے پیسہ صرف خود کھایا جبکہ اومنی گروپ کیس میں پیسہ مل کر کھایا گیا۔شہزاد اکبر نے کہا کہ اسحاق ڈار کی ایک ارب کی جائیداد اور پیسہ ضبط کر چکے ہیں۔ عید کے بعد اسحاق ڈار کے گھر کی نیلامی کریں گے۔معاون خصوصی نے کہا کہ جنہوں نے ملک کا پیسہ لوٹا ان سے ریکوری شروع ہوگئی ہے۔ پبلک آفس ہولڈر اور پرائیوٹ شخصیات سے اربوں روپے ریکور کیے جس میں سے پرائیویٹ کیسز میں ساڑھے 9 ارب ریکور ہوئے جبکہ پبلک آفس اومنی کیس میں ڈھائی ارب ریکور ہوچکے ہیں۔شہزاد اکبر نے کہا کہ یوسف عباس کے اکاونٹ میں ٹی ٹیز کے علاوہ 80 کروڑ آئے۔ ان 80 کروڑ اور ٹی ٹیز کا پیسہ ملا کر شمیم شوگر مل بن جاتی ہے۔ ناصر عبداللہ اومنی کیس میں وعدہ معاف گواہ بن چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ خواجہ آصف کے متعلق کچھ ٹرانزیکشن کی تفتیش کر رہے ہیں۔ عید کے بعد شہباز شریف کے خلاف مزید شواہد سامنے لائیں گے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد