فریال تالپور کو رات بارہ بجے اڈیالہ جیل بھیجنے سےسیلیکٹڈ وزیر اعظم کی ذہنی کیفیت کا اندازہ کیا جا سکتا ہے:احسن اقبال

فریال تالپور کو رات بارہ بجے اڈیالہ جیل بھیجنے سےسیلیکٹڈ وزیر اعظم کی ذہنی ...
فریال تالپور کو رات بارہ بجے اڈیالہ جیل بھیجنے سےسیلیکٹڈ وزیر اعظم کی ذہنی کیفیت کا اندازہ کیا جا سکتا ہے:احسن اقبال

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان  مسلم لیگ ن  کے سینئر رہنما اور سابق  وزیر داخلہ احسن اقبال  نے کہا ہے کہ جس طرح مریم نواز کو عید سے قبل والد کے سامنے اور فریال تالپور صاحبہ کو عید کی رات 12 بجے اڈیالہ جیل بھیجا گیا ،اس سے سیلیکٹڈ وزیر اعظم کی ذہنی کیفیت کا اندازہ کیا جا سکتا ہے،کتنی چھوٹی سوچ اور کینہ پرور ہے، یہ کام 4 روز بعد بھی ہو سکتا تھا، انتقام و حسد کی آگ سے تعمیر نہیں ہو سکتی۔

تفصیلات کے  مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا  تھا کہ پنجابمیں پچھلے 15 ماہ میں سڑکوں کی مرمت اور نگہداشت پر ایک روپیہ بھی خرچ نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے سڑکیں بدحالی اور تباہی کا نمونہ بن رہی ہیں اور کل ان کو بحال کرنے پر اربوں روپے درکار ہونگے۔انہوں نے  کہاکہ تحریک انصاف کی پنجاب دشمنی کی واضح مثال پنجاب کے بلدیاتی اداروں کی غیر آئینی برطرفی ہے جس کا نتیجہ شہروں میں قربانی کے جانوروں کے فضلہ کا انبار اور تعفن ہے ، بلدیاتی ادارے سرکاری سرپرستی میں ہیں جن کی عوام کو کوئی جوابدہی نہیں،آج لوگ کہہ رہے تھے اگر بلدیاتی اداروں کی برطرفی کہیں مسلم لیگ ن نے کی ہوتی تو 24 گھنٹوں میں عدالتوں سے بحال ہو چکے ہوتے، بحالی کیس ہائی کورٹ میں حکومتی التواء کا شکار ہے ، امید ہے سپریم کورٹ اس اہم معاملہ میں مداخلت کرے گی اور بلدیاتی اداروں پر تحریک انصاف کے حملے کا مداوہ کرے گی-احسن اقبال کا کہنا تھا کہ کشمیر ہار کے آئے ہیں یا سودا کیا ہے قوم جواب مانگتی ہے؟ پاکستان کبھی اتنا کمزور نہیں تھا کہ بھارت یکطرفہ اتنا بڑا قدم اٹھانے کی جرات کر سکتا ،مودی پہلے بھی پانچ سال وزیر اعظم تھا مگر ایسی ہمت نہیں کی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور