قومی اسمبلی، گرفتار کارکنوں کو فوری رہا کیا جائے: خواجہ آصف، تحقیقات کرینگے: وزیر خارجہ 

  قومی اسمبلی، گرفتار کارکنوں کو فوری رہا کیا جائے: خواجہ آصف، تحقیقات ...

  

 اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ مریم نواز ہمیشہ عدالتوں میں پیش ہوتی رہیں، نیب کے باہر کا واقعہ پنجاب حکومت کی نااہلی کا ثبوت ہے، لیگی کارکنوں کے خلاف کارروائیاں نہ رکیں تو ذمہ دار حکمران ہونگے۔خواجہ آصف کا قومی اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز کی پیشی کے موقع پر پیش آنیوالے واقعے کی شدید مذمت کی اور کہا کہ متحدہ اپوزیشن اور مسلم لیگ (ن) مطالبہ کرتی ہے کہ گرفتار کارکنوں کو فوری رہا کیا جائے۔ تاہم اس بار پولیس نے ظالمانہ تشدد کیا۔ مریم نواز کی گاڑی کی فرنٹ سکرین ٹوٹ گئی۔ اتنی سیکیورٹی سپریم کورٹ میں نہیں ہوتی، جتنی نیب کے باہر ہوتی ہے۔ آج جبر کی انتہا کر دی گئی کارکنوں پر تشدد کیا گیا۔دوسری طرف وزیر خارجہ نے مریم نواز شریف کی نیب پیشی کے دوران پیش آنے والے واقعہ پر بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ حقائق کو سامنے رکھ کر اقدامات اٹھائیں گے تاکہ آئندہ ایسا نہ ہو، اس کی تحقیقات کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ مریم نواز کو عدالت میں موقف پیش کرنا چاہیے، ایسی احمقانہ حرکت کوئی بھی کر سکتا ہے۔ ہماری کوشش ہوگی کہ ایسا واقعہ دوبارہ پیش نہ آئے۔قومی اسمبلی نے کثرت رائے الیکشن فیس بڑھانے کے بل کی تحریک مسترد کردی۔ منگل کو قومی اسمبلی کی الیکشن فیس ایک لاکھ جبکہ صوبائی اسمبلی کی پچاس ہزار کرنے کے بل کی تحریک حکومتی رکن نصرت واحد نے پیش کی۔حکومت نے بل کی مخالفت کردی۔ وزیرمملکت علی محمد خان نے کہاکہ ہم تو عام آدمی کے لئے الیکشن سستا کرنا چاہتے ہیں اور یہ مہنگا کرنا چاہتے ہیں۔ علی محمد خان نے کہاکہ میں تو فیس کم کرنے کا حامی ہوں،الیکشن عام آدمی تو لڑ ہی نہیں سکتا۔ نصرت واحد نے کہاکہ تیس چالیس کروڑ لگتے ہیں،کوئی تیس چالیس کروڑ نہیں لگتے۔ علی محمد خان نے کہاکہ میرے پندرہ بیس لاکھ دو الیکشنز میں لگے۔ بعدازاں قومی اسمبلی نے کثرت رائے الیکشن فیس بڑھانے کے بل کی تحریک مسترد کردی۔

قومی اسمبلی

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) قومی اسمبلی میں کھاد اور بیجوں پر دی جانے والی سبسڈی کاشتکاروں تک نہ ملنے پر توجہ دلاؤ نوٹس پر بتایاگیا ہے کہ کرونا وائرس کی وجہ سے کچھ معاملات آگے پیچھے ہوئے ہیں، حکومت کسانوں کے ساتھ کھڑی ہے۔ منگل کو کھاد اور بیجوں پر دی جانے والی سبسڈی کاشتکاروں تک نہ ملنے پر توجہ دلاؤ نوٹس ایوان سردار طالب حسن نکئی نے پیش کیا۔امیر سلطان پارلیمانی سیکرٹری نیشنل اینڈ فوڈ سیکورٹی نے کہاکہ کورونا وائرس کیوجہ سے کچھ معاملات آگے پیچھے ہوگئے،اس حوالے سے ہم نے صوبوں کو لکھا ہے لیکن ان کی جانب سے رپلائی نہیں آیا،موجودہ حکومت کسانوں کے ساتھ کھڑی ہے۔پارلیمانی سیکرٹری قومی تحفظ خوراک امیر سلطان نے کہاکہ زراعت اس حکومت کی ترجیحات میں شامل ہیں،پچاس ارب سبسڈی کے لئے رکھے گئے،فرٹیلائزر کی مد میں سبسڈی فراہم کی جائے گی،ڈی اے پی کی نو سو پچیس روپے فی بیگ سبسڈی رکھی گئی ہے،صوبوں کو بتا دیا ہے سندھ نے ابھی تک اپنا طریقہ کار نہیں بتایا،صوبوں نے خریف کے لیے سبسڈی دینے سے معذرت کر لی ہے، احسن اقبال نے بھاری بلز ایوان میں لہرا دیئے۔ منگل کو قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ایک بل 129 روپے ہے اس شخص پر چار ہزار ایڈجسٹمنٹ پر لگا دیئے گئے ہیں،یہ ایک کیس نہیں ہے ہزاروں لوگوں کے ساتھ ہے۔احسن اقبال نے کہاکہ سینکڑوں روپے بل دینے والوں پر ہزاروں روپے بل ایڈجسٹمنٹ کے نام پر ڈال دیے گئے ہیں،ہم غریبوں پر ڈاکہ ڈالنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔ قومی اسمبلی نے پاکستان کی سلامتی کے لیے قرنطینہ کی سہولیات کے لیے ہنگامی اقدامات کا بل متعلقہ کمیٹی کو بھیج دیا۔ منگل کو حکومتی رکن کشور زہرا نے پاکستان کی سلامتی کے لیے قرنطینہ کی سہولیات کے لیے ہنگامی اقدامات کا بل پیش کیا۔ کشو ر زہرا نے کہاکہ کورونا ابھی ختم نہیں ہوا، ہمیں ایسی صورتحال کے لیے قانون سازی کرنا ہوگی۔

کسان بیج

مزید :

صفحہ اول -