انسداد دہشتگردی عدالت سرگودھا کا بڑافیصلہ، مجرم کو10بارسزائے موت

 انسداد دہشتگردی عدالت سرگودھا کا بڑافیصلہ، مجرم کو10بارسزائے موت

  

 بہاول پور(بیورورپورٹ) انسداددہشت گردی عدالت سرگودھاکافیصلہ‘ضیاء اللہ کو10 بارسزائے موت‘17سال قیدبامشقت‘6 لاکھ روپے جرمانہ‘ سرگودھا  کی انسداد دہشتگری عدالت میانوالی کے جج  عتیق الرحمن بھنڈر نے الزام علیہ ضیا اللہ کو الرام تابت ہونے پر  مختلف دفعات کے تحت 10 بار سزائے موت،  عمر قید،  17سال قید با مشقت آور 6 لاکھ چالیس ہزار روپے جرمانہ کی سزا کا حکم سنایا ہے۔ اور جملہ وارثان کو 20 لاکھ فی کس کے مطابق معاوضہ ادا (بقیہ نمبر50صفحہ7پر)

کرنے کا حکم سنایا تفصیلات کے مطابق میانوالی دہشت گردی  کے مشہور مقدمہ جس میں سات ملزمان نے 2009 میں  قدرت آباد پولیس چوکی کو بم سے اڑا دیا تھا جس کے نتیجے میں 8 پولیس اہلکار شہید ہو گئے تھے  میں ملوث ایک ملزم ضیا اللہ کو الرام ثابت ھونے پر مختلف دفعات 4/5  Explosive Substance Act , 302,396, 440, 412 ت پ اور 7 ATA کے تحت سزا سنائی.   ملزم کے خلاف ابتدائی طور پر تھانہ وان بھچران میں مقدمہ درج کیا گیا تھا بعد ازاں سی ٹی ڈی میانوالی نے مقدمہ کی تفتیش کی  ملزم کیخلاف ٹرائل کر کے کیس مکمل کیا گیا۔  استغاثہ کی جانب سے  ڈپٹی پراسیکوٹر چنرل  نے ملزم کے خلاف دلائل مکمل کیے اور ریکارڈ پیش کیا پراسیکوٹر نے ایڈیشنل پراسیکوٹر جنرل پنجاب خرم خان کی نگرانی میں پیروی کی۔

سزائے موت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -