وزیراعلیٰ محمودخان نے کوڈو19کے باوجودبی آرٹی پرکام کرایا، شوکت یوسفزئی 

  وزیراعلیٰ محمودخان نے کوڈو19کے باوجودبی آرٹی پرکام کرایا، شوکت یوسفزئی 

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر محنت اور ثقافت شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ محمود خان نے کووڈ 19 کے باوجود بی آر ٹی پر کام کرایا اور دن رات اس میگا پراجیکٹ کی خود نگرانی کی جس کی بدولت یہ منصوبہ مکمل ہو گیا ہے۔ بی آر ٹی کا باقاعدہ افتتاح وزیر اعظم پاکستان عمران خان 13 اگست کو وزیر اعلیٰ محمود خان کے ہمراہ کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک بڑا منصوبہ ہے جو شفافیت کے ساتھ مکمل ہو گیا ہے۔ کوئی بھی اس منصوبے میں کرپشن ثابت نہیں کر سکتا اپوزیشن کے پاس اگر کوئی ثبوت ہے تو سامنے لائے وزیراعلی محمود خان خود کرپشن میں ملوث افراد کو سزا دینگے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بی آر ٹی منصوبے کے دورے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی وزیر نے بی آر ٹی کے مرکزی سنٹرل روم کا دورہ کیا جہاں سے پورے بی آر ٹی کی نگرانی ہو گی اور سیکیورٹی کا جائزہ لیا جائے گا۔ بی آر ٹی بسیں چمکنی سے حیات آباد تک 45 منٹ میں پہنچے گی بی آر ٹی میں کل 31 سٹیشنز اور 220 بسیں ہیں۔ اور یہ انٹرنیشنل سٹینڈرڈ کے مطابق وقت کے لحاظ سے اپنی مقررہ رفتار سے سفر کریں گی۔۔ بی بی آر ٹی کے پہلے دو لاکھ کارڈز عوام میں فری تقسیم کیے جا رہے ہیں۔ شوکت یوسفزئی نے بی آر ٹی بس میں مختلف سٹیشنوں کا بھی دورہ کیا عوام سے ملے اور سٹیشنوں میں جاری آپریشن کا جائزہ لیا۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ یہ منصوبہ پشاور کے عوام کے لیے وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلی محمود خان کا ایک تحفہ ہے اس منصوبے کے لیے عوام کی خوشی قابلِ دید ہے بی آر ٹی سے عام لوگوں   کے ساتھ ساتھ سب سے زیادہ فائدہ خواتین اور طلباء کو ہو گا جو آرام اور حفاظت کے ساتھ سفر کریں گے۔ پیپلز پارٹی اور عاجز دھامرا کا ذکر کرتے ہوئے شوکت یوسفزئی نے کہا کہ اب ان کو نظر آ گیا ہوگا کہ بی آر ٹی بن گئی ہے میں ان سے پو چھنا چاہتا ہوں کہ میری بی آر ٹی تو بن گئی تیرا کیا ہوگا کالیا۔۔۔۔۔۔۔ ہماری بی آر ٹی تو بن گئی ہے لیکن عاجز دھامرا بتائے کہ کراچی میں تین کلومیٹر کا اورنج منصوبہ کب مکمل ہو گا؟ شوکت یوسفزئی نے کہا کہ ایک میگا پراجیکٹ سے پشاور شہر کارپوریشن سے اپ گریڈ ہو کر میٹرو پولیٹن بن گئی ہے۔

مزید :

صفحہ اول -