تجاوزات سے متعلق کیس : کراچی اس وقت ایک یتیم شہربناہواہے،وفاقی حکومت کراچی کو بچانے کیلئے مختلف قانونی، آئینی آپشن سوچ رہی ہے،اٹارنی جنرل کے دلائل 

 تجاوزات سے متعلق کیس : کراچی اس وقت ایک یتیم شہربناہواہے،وفاقی حکومت کراچی ...
 تجاوزات سے متعلق کیس : کراچی اس وقت ایک یتیم شہربناہواہے،وفاقی حکومت کراچی کو بچانے کیلئے مختلف قانونی، آئینی آپشن سوچ رہی ہے،اٹارنی جنرل کے دلائل 

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں تجاوزات سے متعلق کیس میں اٹارنی جنرل نے کہاکہ کراچی اس وقت ایک یتیم شہربناہواہے،کراچی تباہ ہواتو پاکستان تباہ ہوگا،وفاقی حکومت کراچی کو بچانے کیلئے مختلف قانونی، آئینی آپشن سوچ رہی ہے،اس وقت یہ بتانے کی پوزیشن میں نہیں کہ کیااقدامات ہوسکتے ہیں،گزشتہ روز بھی وزیراعظم سے تفصیلی بات ہوئی تھی ۔

نجی ٹی وی جی این این کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میںتجاوزات سے متعلق کیس کی سماعت جاری ہے،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں بنچ سماعت کررہاہے،چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ یہ کس قسم کاکلچر بن گیاہے،جسٹس فیصل عرب نے کہاکہ لوگوں کو اصل ضروریات صحت اورتعلیم میسرنہیں ۔

عدالت نے کہاکہ پانی ،بجلی فراہم کرنے کے بنیادی حقوق ہی نہیں دے سکتے توتعلیم تودور کی بات ہے،جسٹس فیصل عرب نے کہاکہ ملکی معیشت 75 فیصد زراعت پر انحصار کرتی ہے،زرعی زمینوں کو پانی تک فراہم نہیں کیاجارہاہے،ایک مجسٹریٹ نے ٹیل تک پانی پہنچانے کیلئے حکم دیا،سارے ذمہ دار اس کیخلاف متحرک ہوگئے ،اس کاتبادلہ کرانے کیلئے کوشش کرتے رہے ۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ سندھ میں یہ سب کیاچل رہاہے جس کی لاٹھی اس کی بھینس،کیااس طرح میگاسٹی چلتے ہیں،چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ سندھ کے اندرجتنے پراجیکٹ شروع کئے گئے ساراپیسہ کرپشن کی نظرہوگیا،تھرپارکر،لاڑکانہ،سکھر میں سب جگہوں پر تمام منصوبے ناکام ہو گئے ،ملک قرضوں پر چل رہاہے ،کوئی ہسپتال بنا نہ کوئی بڑا منصوبہ بنا،یہ مکمل طور پر ناکامی نہیں تواورکیاہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -