صوبے میں آٹے کی قلت کا معاملہ، پنجاب فوڈ اتھارٹی نےایسا کام شروع کردیا کہ ذخیرہ اندوزوں کی شامت آ گئی

صوبے میں آٹے کی قلت کا معاملہ، پنجاب فوڈ اتھارٹی نےایسا کام شروع کردیا کہ ...
صوبے میں آٹے کی قلت کا معاملہ، پنجاب فوڈ اتھارٹی نےایسا کام شروع کردیا کہ ذخیرہ اندوزوں کی شامت آ گئی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) آٹے کی قلت کا معاملے پر پنجاب حکومت کے سینئر وزیرکی خصوصی توجہ کے بعد فوڈ اتھارٹی نے فلور ملز پروڈکشن اور سپلائی انسپکشن شروع کر دی۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب بھر میں معیاری خوراک کی یقینی فراہمی کے لیے روزانہ کی بنیاد پر فوڈ اتھارٹی کی مسلسل کارروائیاں جاری ہیں۔ کارروائیوں کے دوران فوڈ اتھارٹی ٹیموں نے ایک فوڈ پوائنٹ کی پروڈکشن اصلاح تک بند کردی ہے جبکہ 175فوڈ پوائنٹس سے سیمپلز لیبارٹری تجزیے کے لیے بھی حاصل کر لیے ہیں۔موبائل ٹیسٹنگ لیبارٹریوں نے 15ملک شاپس، 219 دودھ بردار گاڑیوں میں 2 لاکھ 47 ہزار896 لیٹر دودھ چیک کیا۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی کےمطابق ناقص انتظامات پرلاہورمیں اطہربرادرز مربہ یونٹ،ڈوگر سجی،چوہدری آصف ملک شاپ،مدینہ ملک،پولکا انداز بیکری،اورینٹ پیورواٹر یونٹ کو سیل کیا گیا۔  30ہزار 439 لیٹر ملاوٹی دودھ،109کلو گوشت،اور دالیں بھی تلف کی گئی۔

ڈی جی فوڈ اتھارٹی پنجاب عرفان نواز میمن کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی بائیک سکواڈ نے گلی کوچوں میں 30 فوڈ پوائنٹس کو چیک کیا،خوراک کے معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ،معیاری خوراک کی یقینی فراہمی کےلیےروزانہ کی بنیادپرمسلسل کارروائیاں جاری ہیں، پنجاب کے 36اضلاع میں ہر چھوٹا بڑا فوڈ پوائنٹ صرف پنجاب فوڈ اتھارٹی قوانین کے مطابق ہی کام کر سکتا ہے۔ 

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -