"بھارت اب سیکولر نہیں رہا" وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری برس پڑے

"بھارت اب سیکولر نہیں رہا" وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری برس پڑے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور خارجہ کے اجلاس میں وزیر خارجہ بلاول بھٹو نے   بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ   بھارت اسلامو فوبک بیانات کے بعد اب سیکولر نہیں رہا، تاثر جارہا ہے کہ بھارت مسلم دشمن ملک بنتا جارہا ہے۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے امور خارجہ کا اجلاس   فاروق ایچ نائیک  کی زیر صدارت ہوا ۔ نجی ٹی وی "ہم نیوز "کے مطابق  بلاول بھٹو نے کہا کہ جب سے کشمیر پر 5 اگست 2019 کا حملہ ہوا، تمام جماعتیں اکٹھی ہیں،ہم نے بین الاقوامی سطح پر 5 اگست 2019 کے معاملے کو اٹھایا،   مسئلہ کشمیر ہر پاکستانی کیلیے بہت اہم ہے، ہم نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں معاملہ اٹھایا۔

نجی ٹی وی کے مطابق بلاول بھٹو نے کہا کہ امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن سے ملاقات میں بھی مسئلہ کشمیر اٹھایا، سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ ،  سیکرٹری جنرل او آئی سی  سے ملاقات میں بھی مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا، اقوامِ متحدہ کی سیکیورٹی کونسل میں بھی مسئلہ کشمیر کو اٹھایا گیا۔

وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ اسلاموفوبک مذمتی بیانات کو بھی ہم نے عالمی سطح پر اٹھایا، کشمیر میں حلقہ بندیوں سے مسلمانوں کی اکثریت ختم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،  یاسین ملک کی گرفتاری غیر قانونی ہے،  مودی وزیراعظم بننے سے پہلے گجرات کے قصائی کے طور پر جانا جاتا ہے،  مودی کو دنیا میں ویزا نہیں ملتا تھا، وزیراعظم بننے کے بعد ویزا ملا۔

وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ ہم سمجھے تھے کہ مودی اقتدار میں آنے کے بعد پاکستان سے تعلقات بہتر بنائے گا۔

مزید :

قومی -