نائیجریا میں چرچ کی چھت گرنے سے 200افراد ہلاک، سینکروں زخمی

نائیجریا میں چرچ کی چھت گرنے سے 200افراد ہلاک، سینکروں زخمی

ابوجا(اے این این ) جنوبی نائیجیریا میں ایک چرچ کی چھت گرنے سے200 افراد ہلاک،سینکڑوں زخمی ہو گئے۔ یہ گرجا گھر نائیجیریا کی ریاست اکوا اِبوم کے دارالحکومت اویو میں واقع ہے ریاستی حکام نے اس واقعے کی تفتیش کا اعلان کیا ہے۔ نائیجیریا کی ریاست اکوا اِبوم کے دارالحکومت اویو کی میڈیکل یونیورسٹی کے ٹیچنگ ہسپتال کے ڈائریکٹر ایٹیٹے پیٹرز کے مطابق گرجا گھر کی چھت گرنے کے واقعے میں 200 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ چھت کا بھاری ملبہ ہٹانے کے بعد ہلاک ہونے والے عبادت گزاروں کی تعداد بہت زیادہ ہو سکتی ہے۔ اویو شہر کے ایک نوجوان سیاسی رہنما ایڈکان پیٹرز نے کہاہے کہ شہر کے کئی پرائیویٹ مردہ خانوں میں نعشیں رکھی گئی ہیں اور انہیں ہلاک ہونے والوں کی حتمی تعداد میں شامل نہیں کیا گیا ہے۔ چھت گرنے کا حادثہ ایوو شہرکے رائگنر بائبل چرچ میں ہوا۔ اس گرجا گھر کی تعمیر ابھی جاری تھی۔ مزدور اس زیر تعمیر گرجا گھر کی افتتاحی دعائیہ تقریب کے لیے آخری تعمیراتی مراحل کو مکمل کرنے کی کوشش میں تھے کہ چھت وسیع و عریض ہال میں موجود عبادت گزاروں پر گر گئی۔ اس حادثے کے وقت ہال میں ریاستی گورنر سمیت سینکڑوں افراد موجود تھے۔ کنکریٹ اور لوہے کی جالیوں سے بنائی گئی چھت کا ملبہ ہٹانے کا کام شروع کردیاگیاہے۔ ریاستی گورنر کے ترجمان نے کہا ہے کہ حکومت نے چرچ کی تعمیر میں استعمال ہونے والے میٹیریل کی پائیداری کے حوالے سے تفتیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس بیان کے مطابق اگر بددیانتی کا عنصر پایا گیا تو تعمیر میں شریک تمام افراد کو عدالتی کٹہرے میں کھڑا کیا جائے گا ۔

مزید : صفحہ آخر