جماعت اسلامی نے وزارتوں اور فنڈز کی خاطر اسلامی نظریات کو پیچھے چھوڑ دیا:عطا الرحمان

جماعت اسلامی نے وزارتوں اور فنڈز کی خاطر اسلامی نظریات کو پیچھے چھوڑ دیا:عطا ...

بونیر ) نمائندہ پاکستان ( علماء اسلام کے مرکزی رہنماء سینٹر مولانا سینٹر عطاء الرحمان اور صو بائی جنرل سیکرٹری مولنا شجاع الملک نے کہاہے کہ مستقبل میں ایم ایم اے کی بحالی کا کو ئی امکان نہیں ہے ،جماعت اسلامی نے تین وزراتوں اور اٹھ فیصد فنڈز کی خاطر اسلامی نظریات کو پس پشت ڈال دیاہے ،امریکہ اور اسکے اتحادیوں کو افغانستان میں اپنی شکست تسلیم کرکے واپس جانا چاہئے جسکے بعد افغانستان میں ایک اسلامی حکومت قائم ہوگی ۔وطن عزیز کی ازادی میں ساٹھ ہزار علماء کرام نے قربانیاں دی تھی ،پاکستان باچا خانی ،عمران خانی اور روٹی کپڑ امکان جیسے نعروں کے لئے ازاد نہیں ہوا تھا بلکہ پاکستان کی ازادی کا ایک نعرہ تھا ،پاکستان کا مطلب کیا لاالہ اللہ ۔جے یو ائی کی صد سالہ تقریبات اپریل 2017 میں منعقد ہورہے ہیں جس میں پوری دنیاں سے اسلامی ممالک کے سربراہان بھر پور شکرکت کریں گے ،عام انتحابات میں جمعیت علماء اسلام صوبہ خیبر پحتون خواہ میں ایک مضبوط حکومت بنائیں گی ،اے این پی دور کی کرپشن ابھی تک عوام کو یاد ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سواڑی میں تحصیل گاگرہ کے زیر اہتتما پیغام جمعیت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،کانفرنس سے سابق وفاقی وزیر جے یو ائی کے ضلعی نائب امیر استقبال خان ،ایم پی اے مفتی فضل غفور ،سردار خان اف چناڑ ،شمس لعارفین ،خبیب اللہ خان ،عزیز خان ایڈوکیٹ نے خطاب کیا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر