مسلم حکمرانوں کی نا اہلی کے باعث 6کروڑ مسلمان اپنا وطن چھوڑنے پر مجبور ہو ئے:مشتاق احمد خان

مسلم حکمرانوں کی نا اہلی کے باعث 6کروڑ مسلمان اپنا وطن چھوڑنے پر مجبور ہو ...

چکدرہ(نمایندہ پاکستان) جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مشتاق احمد خان نے کہا کہ امت مسلمہ کے حکمرانوں کی نااہلی کی وجہ سے اس وقت چھ کروڑ مسلمان مہاجرین کی ذندگی بسر کر رہے ہیں،کشمیر ، فلسطین ،برما اور شام میں مسلمانوں پر ظلم کیا جا رہا ہے ،سلامتی کونسل کی پانچ مستقل ارکان میں مسلمانوں کی نمائندگی نہیں ہے سیرت النبیؐ مسلمانوں کیلئے مشعل راہ ہے ، سندھ اسمبلی سے ا قلیت کے نام پر پاس ہونے والا قانون شریعت کے منافی ہے جس کے خلاف بھر پور آواز اٹھائی جارہی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے چکدرہ میں جماعت اسلامی ادینزئی کے زیر اہتمام سیرت النبیؐ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا کانفرنس سے حزب المجاہدین کے مرکزی امیر مولانا تاج علی شاہ، جماعت اسلامی کے صوبائی نائب امیر نور الحق ، حزب المجاہدین کے ضلعی امیر عبید اللہ خلیل ،تحصیل امیر راہی شاہ ، عطاء اللہ خان ایڈوکیٹ نے بھی خطاب کیا جبکہضلعی امیر مولانا اسد اللہ ، ضلع نائب ناظم عبد الرشید ، تحصیل نائب ناظم مدت خان اور سلطنت یار موجود رہے اپنے خطاب میں مقررین نے کہا کہ پاکستان اسلامی نظرئیے کے تحت وجود میں آیا تھا لیکن حکمرانوں اور اشرافیہ نے اب تک اسے مکمل طور پر ایک اسلامی اور فلاحی ریاست بننے نہیں دیا کیونکہ ان کی بقاء امریکہ اور مغرب کے ایجنڈے کی تکمیل میں ہے جو کسی طور پر مسلمانوں کو مظبوط اور دین پر عمل کرنے والے نہیں دیکھنا چاہتے مقررین نے کہا کہ ہمارے لئے سیرت النبی ؐ مشعل راہ ہے اور جب تک ہم مکمل طور پر دین میں داخل نہیں ہونگے ہمارے حالات نہیں بدلیں گے انہوں نے صوبائی اسمبلی سے سود کے خلاف پاس ہونے والے بل پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے واضح کیا کہ جماعت اسلامی سود کے خلاف جہاد جارہی رکھے گا جبکہ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی سے پہلی جماعت سے بارویں تک ناظرہ اور قرآن شریف کی ترجمہ کا مسودہ بھی متفقہ طور پر پاس کیا ہے جو جلد اسمبلی میں پیش کیا جائے گا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر