حکومت نے 27دسمبر تک بلاول بھٹو کے چار نکات منظور نہ کیے تو پھر ہم اپنا لائحہ عمل دیں گے :قمر زمان کائرہ

حکومت نے 27دسمبر تک بلاول بھٹو کے چار نکات منظور نہ کیے تو پھر ہم اپنا لائحہ ...
حکومت نے 27دسمبر تک بلاول بھٹو کے چار نکات منظور نہ کیے تو پھر ہم اپنا لائحہ عمل دیں گے :قمر زمان کائرہ

  


سکھر(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما قمرزمان قائرہ نے کہاہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے سپریم کورٹ جا کر غلطی کی ہے،ہم نے عمران خان سے کہاتھا کہ عدالت کو طاقتور بناتے ہیں ،پاناما لیکس کیلئے قانون لے کر آتے ہیں ،سپریم کورٹ کو بااختیار بنا کر پھر انویسٹی گیشن ہو گی ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نے اب سبق سیکھ لیاہے،احتجاج کی بات کررہے ہیں۔

نیوزکانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے قمر الزمان کائرہ کا کہناتھا کہ حکومت ہمارے مطالبات 27دسمبر تک بلاول بھٹو کے چار نکا ت منظور کرے ،حکومت نے مطالبات نہ مانے تو اس کے بعدہم اپنا لائحہ عمل دیں گے۔ان کا کہناتھا کہ نیشنل ایکشن پلان کے ایک حصہ پر عمل ہورہا ہے، سول حکومت عمل نہیں کررہی،سندھ حکومت نیشنل ایکشن پلان پر عمل کررہی ہے لیکن پنجاب حکومت نہیں کررہی،پنجاب میں دہشت گرد تنظیموں کے لوگ انتخاب لڑرہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیرمملکت برائے اطلاعات سے گزارش ہے بیان دیتے ہوئے سوچ لیا کریں ، حکومت نے مجبور کیا تو اپوزیشن کے ساتھ ملکر فیصلہ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ پاناما پر اگر سندھ حکومت کی منظوری چاہیے تو ابھی کرادیتے ہیں،عمران خان نے کہا کہ بل سے پیپلز پارٹی حکومت کو راستہ دینا چاہتی ہے،اس بل پر تحریک انصاف کے رہ نماو¿ں کے دستخط ہیں،یہ سب کا مشترکہ بل ہے، اس طرح کی باتیں کرنا مناسب نہیں۔ان کا کہناتھا کہ عمران خان غور کریں جو مشورہ پیپلز پارٹی نے دیا اس کا کیا نتیجہ نکلا۔

مزید : سکھر