دیوار پر لگی 200 سال پرانی پینٹنگ کی نوجوان لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی

دیوار پر لگی 200 سال پرانی پینٹنگ کی نوجوان لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی
دیوار پر لگی 200 سال پرانی پینٹنگ کی نوجوان لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی

  

لندن(نیوز ڈیسک) کیا زمانہ آ گیا ہے! انسان تو انسان، اب تصاویر بھی جنسی جرائم کی مرتکب ہونے لگی ہیں۔ ایک برطانوی دوشیزہ کا کہنا ہے کہ اسے 200 سال پرانی ایک پینٹنگ نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ہے،اور یہ کام ایک بار نہیں بلکہ تین بار ہو چکا ہے۔

دی مرر کے مطابق 26 سالہ شیانگ جیمسن نے بتایا کہ اس کے ساتھ یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب وہ ایک دور دراز نواحی علاقے میں ایک قدیم حویلی میں قیام پزیر تھی۔ اس نے اپنے ساتھ پیش آنے والے معاملے کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا ”اس حویلی کے مرکزی کمرے میں ایک نوجوان کی پینٹنگ لگی ہوئی تھی جو انیسویں صدی کے اوائل میں دنیا سے رخصت ہوچکا تھا۔ یہ جگہ بہت پرسکون تھی اور میں خود کو وہاں بہت خوش محسوس کررہی تھی۔ ایک صبح میں بیدار ہوئی تو دیکھا کہ سیاہ بالوں والا ایک ہینڈسم مرد میرے پہلو میں لیٹا ہوا تھا۔ مجھے لگا کہ میں خوا ب دیکھ رہی ہوں اور میں نے کروٹ بدل کر منہ دوسری جانب کر لیا۔ جیسے ہی میں نے اپنا منہ دیوار کی طرف کیا مجھے اپنی کمر پر کسی کا ہاتھ محسوس ہوا۔ تب مجھے اندازہ ہوا کہ وہاں واقعی میرے ساتھ کوئی لیٹا ہوا تھا۔ جب میں نے مڑ کر دیکھا تو یہ وہی نوجوان تھا جو آتش دان کے اوپر لگی پینٹنگ میں نظر آ رہا تھا۔ وہ دھیرے دھیرے میں قریب آتا گیا اور پھر میرے ساتھ لپٹ گیا۔ مجھے سمجھ نہیں آرہا تھا کہ میرے ساتھ کیا ہورہا تھا لیکن مجھے پوری طرح یقین تھا کہ میں سو نہیں رہی تھی بلکہ یہ سب کچھ حقیقت میں ہورہا تھا۔ وہ میرے ساتھ جسمانی تعلق استوار کر رہا تھا اور میں حیرت اور بے یقینی کے عالم میں یہ سب دیکھ رہی تھی۔ اگلی صبح ایک بار پھر وہ میرے کمرے میں ظاہر ہوا اور دوبارہ میرے ساتھ جسمانی تعلق استوار کیا۔ پھر وہ میرے سامنے ہی اپنا لباس پہن کر باہر نکل گیا۔میں اسے دروازے سے باہر جاتا دیکھ رہی اور پھر وہ اچانک ہوا میں غائب ہوگیا۔ اگلی رات جب میں سونے کی تیاری کررہی تھی تو اچانک کسی نے میرے اوپر سے چادر کھینچ لی۔ یہ وہی تھا۔ اس نے ایک بار پھر میرے ساتھ جسمانی تعلق استوار کیا اور پہلے کی طرح وہاں سے غائب ہوگیا۔ میں وہاں مزید کئی دن رہی لیکن اس کے بعد وہ واپس نہیں آیا۔“

’میں نے 15 بھوتوں کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کئے اور میں ان کے۔۔۔‘ نوجوان لڑکی نے ایسی بات کہہ دی کہ دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا، ہر شہری دنگ رہ گیا

ماہر نفسیات ٹینا راڈزی وک نے اس معاملے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ”شیان کے حیرت انگیز تجربات دراصل اس کے اپنے تخیل کے سوا کچھ نہیں ہوسکتے۔ عام طور پر جب ہم جاگنے کی حالت سے نیند کی حالت میں داخل ہورہے ہوتے ہیں، یا نیند کی حالت سے جاگنے کی حالت میں داخل ہورہے ہوتے ہیں، تو بعض اوقات ہمارے دماغ میں ایسے تخیلات ابھرتے ہیں جو بے حد حقیقی محسوس ہوتے ہیں۔ا گرچہ یہ نیم خواب کی کیفیت ہوتی ہے لیکن ہم محسوس کرتے ہیں کہ ہمیں یہ تجربہ جاگنے کی حالت میں ہو چکا ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -