اسرائیل میں عربوں کا بائیکاٹ کیا جائے: صیہونی وزیردفاع

اسرائیل میں عربوں کا بائیکاٹ کیا جائے: صیہونی وزیردفاع

مقبوضہ بیت المقدس(یوا ین پی)اسرائیل کے وزیردفاع اویگدور لیبرمین نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے متنازعہ فیصلے کے خلاف اسرائیلی علاقوں میں احتجاج کرنے والے عربوں کے کاروبارسمیت مکمل بائیکاٹ کا مطالبہ کردیا۔قوم پرست وزیر دفاع نے کہا کہ اسرائیل کے شمال میں واقع وادی عارہ ہمارا حصہ نہیں اور اسرائیل کے یہودیوں کو ان علاقوں میں نہیں جانا چاہیے اور ان کی مصنوعات بھی نہ خریدی جائیں۔اسرائیلی وزیردفاع نے کہا کہ ٹرمپ کے فیصلے پر احتجاج کرنے والے اسرائیل سے تعلق نہیں رکھتے اوران کا ہمارے ملک سے کوئی تعلق نہیں ہے۔میں تمام اسرائیلی شہریوں سے کہوں گا کہ وہ ان عربوں کی دکانوں میں جانا بند کردیں، خریداری اور خدمات حاصل کرنا بند کریں جس کا سیدھا مطلب ہے کہ وادی عارہ کا بائیکاٹ کیاجائے تاکہ انھیں احساس ہو کہ یہاں انھیں اچھا نہیں سمجھا جاتا۔خیال رہے کہ اسرائیل کے شمالی علاقے سے متصل ہائی وے میں عربوں نے احتجاج کیا جہاں درجنوں نقاب پوش افراد نے کاروباری علاقوں اور پولیس کے سامنے رکاوٹیں کھڑی کیں اور پتھراؤ کیا جس کے نتیجے میں تین اسرائیلی زخمی ہوئے اور کئی گاڑیوں کو نقصان پہنچا تھا۔

مزید : عالمی منظر