امام شاہ احمد نورانی مرحوم کے بعد عالم اسلام میں مخلص قیادت کا بڑا خلاء پیدا ہو گیا ،زوار بہادر

امام شاہ احمد نورانی مرحوم کے بعد عالم اسلام میں مخلص قیادت کا بڑا خلاء پیدا ...

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)جمعیت علماء پاکستان کے زیر اہتمام علامہ امام شاہ احمد نورانی صدیقی رحمتہ اللہ علیہ کے 14ویں یوم وصال پر ملک بھر میں 11 دسمبر کو ’’یوم امام نورانی ‘‘منایا گیااس سلسلہ میں علامہ قاری محمد زوار بہادر صدر جمعیت علماء پاکستان کی صدارت میں جامعہ محمدیہ رضویہ گلبرگ میں امام شاہ احمد نورانی سیمینار منعقد ہوا۔ سیمینار سے پروفیسر ڈاکٹرجاوید اعوان،علامہ اظہر حسین فاروقی، مفتی تصدق حسین،حافظ نصیر احمد نورانی،محمد ارشد مہر،رشید احمد رضوی ،ملک بشیر احمد نظامی، حافظ احسان الحق،حافظ لیا قت علی رضوی، مولانا نذر احمد سعیدی اور دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا۔سیمینار سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے علامہ قاری محمد زوار بہادر نے مولانا شاہ احمد نورانی کی دینی ،سیاسی اور ملک و ملت کے لئے خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ امام شاہ احمد نورانی کے دنیا سے رخصت ہوجانے کے بعد عالم اسلام اور بلخصوص وطن عزیز پاکستان میں مخلص اور اہل قیادت کا بہت بڑا خلاء پیدا ہو گیا ہے۔

۔اس وقت مضبوط قیادت نہ ہونے کی وجہ سے ملک و قوم طرح طرح کی مشکلات سے دو چار ہیں۔

پاکستان اس وقت تاریخ کے بدترین بحران سے گزر رہا ہے ملک میں بحرانوں کا راج ہے یہ سب کچھ ہمیں اپنے محسنوں سے بے وفائی کی وجہ سے بھگتنا پڑ رہا ہے انتخابات کے وقت اگر پاکستانی قوم نے لیٹروں ،جاگیرداروں اور نااہل حکمرانوں کو اپنے سروں پر مسلط نہ کیا ہوتااور ملک میں نظام مصطفےٰ کا ساتھ دیتے تو آج یہ دن دیکھنا نہ پڑتا ۔انہوں نے کہا کہ امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے اور سفارت خانے منتقل کرنے کا اقدام اسلام دشمنی ہے امریکی صدر اور اسرائیل کے اس اقدام سے عالمی امن تباہ وبرباد ہو جائے گا۔ اسوقت پوری دنیا میں مسلمانوں کا خون پانی کی طرح بہایا جا رہا ہے فلسطین ، کشمیر ،شام اور برما میں نہتے مسلمانوں کا بے دریغ قتل عام کیا جا رہا ہے ان تمام معاملات پر عالم اسلام بے بسی اور بے غیرتی کی تصویر بنا ہوا ہے آج کے دور میں امام نورانی جیسے عالمی رہنما کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ ختم نبوت کے خلاف سازش کرنے والوں کو بے نقاب کیا جائے وگرنہ عوام میں بے چینی بڑھتی رہے گی انہوں نے تحریک لبیک پاکستان کے اسلام آباد دھرنے کے شہداء اور ماڈل ٹاؤں کے شہداء کے قاتلوں کو کیفرکردار تک پہچانے،شہباز شریف اور رانا ثناء اللہ کے استعفیٰ کا بھی مطالبہ کیا۔سیمینارسے خطاب کرتے ہوئے مفتی تصدق نے کہا کہ علامہ شاہ احمد نورانی ایک بہت قد آور اور سلجھے ہوئے سیاست دان شب زندہ دارولی کامل اور اسلام کے سچے مبلّغ تھے۔ امام شاہ احمدنورانی نے پارلیمنٹ کے ممبر کی حیثیت سے بے مثال کردار ادا کرتے ہوئے ملک کو 73ء کا متفقہ آئین دینے میں اہم کردار ادا کیا،پاکستان کو اسلامی جمہوریہ اور پارلیمنٹ سے اُمت مسلمہ کے غدارقادیانیوں کو غیر مسلم اقلیت قرار دلوایا۔حافظ نصیر احمد نورانی نے کہا کہ امام نورانی نے ساری زندگی رسول اللہ ﷺ کے لائے ہوئے قانون نظام مصطفےٰﷺ کے نفاذکے لئے جدوجہد کی اگر ملک میں بروقت نظام مصطفےٰﷺ کا نفاذ ہو جاتا تو آج وطن عزیزان بدترین حالات سے دو چار نہ ہوتا آج بھی ان کے بتائے ہوئے اصولوں پر عمل کرکے حالات پر قابو پایا جاسکتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4