گوجرانوالہ ریلوے سٹیشن کی مسماری کیخلاف حکم امتناعی میں توسیع

گوجرانوالہ ریلوے سٹیشن کی مسماری کیخلاف حکم امتناعی میں توسیع

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے گوجرنوالہ ریلوے اسٹیشن کو مسمار کرنے کے خلاف حکم امتناعی میں 11جنوری تک توسیع کردی ، عدالت میں محکمہ ریلوے کی جانب سے پنجاب میں قدیم ریلوے سٹیشنز کے اعداد وشمار جمع کروادیئے گئے ہیں ۔چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ سید منصور علی شاہ نے سول سوسائٹی کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار سول سوسائٹی کی رہنما عمرانہ ٹوانہ نے عدالت میں موقف اختیار کیاکہ حکومت تاریخی ورثہ کو تباہ کررہی ہے ، تاریخی ورثہ اہم اہمیت کا حامل ہے اور حکومت ڈیڑھ سو سال پرانا تاریخی اہمیت کا حامل گوجرانوالہ ریلوے سٹیشن مسمار کرنے جا رہی ہے ،گوجرنوالہ ریلوے سٹیشن کی مسماری کالعدم قراردی جائے، محکمہ ریلوے کے وکیل نے پنجاب میں قدیم ریلوے سٹیشنز کی رپورٹ داخل کراتے ہوئے 1862ء سے 1929ء تک کے پنجاب میں واقع 609 قدیم ریلوے سٹیشنز اصل حالت میں موجود ہیں جن میں سے 400 ریلوے سٹیشنز فعال ہیں اور 200 ریلوے سٹیشنز غیر فعال ہیں مگر ان کی عمارتیں اصل حالت میں موجود ہیں ۔عدالت نے تاریخی ریلوے سٹیشنز سے متعلق ایڈوئزاری اور حکومتی کمیٹی کی رپورٹس طلب کرتے ہوئے گوجرنوالہ ریلوے سٹیشن کی مسماری کے خلاف حکم امتناعی میں 11 جنوری تک توسیع کردی ہے۔

حکم امتناعی

مزید : صفحہ آخر