تخت بھائی ،پی کے 26 کے مختلف علاقوں میں گیس کی منظوری

تخت بھائی ،پی کے 26 کے مختلف علاقوں میں گیس کی منظوری

تخت بھائی(نامہ نگار) جمعیت علماء اسلام خیبر پختونخواہ شعبہ خواتین کی چیئر پرسن و خاتون رکن قومی اسمبلی نعیمہ کشور کے خصوصی فنڈ سےPK-26کے مختلف علاقوں کے لیے مزید 60 کلومیٹرفاصلے تک گیس فراہمی کی منظوری ، اس سے قبل بھی خاتون رکن قومی اسمبلی کے فنڈ سے60کلومیٹر فاصلے تک گیس اور بجلی سمیت دیگر منصوبوں کی منظوری ہو چکی تھی جس پر کام تیزی جاری ہیں، میڈیا کلب تخت بھائی ایک پر ہجوم پریس کانفرنس میں اظہار خیال کرتے ہوئے جمعیت علماء اسلام خیبر پختونخواہ کی شعبہ خواتین کی چیئر پرسن و رکن قومی اسمبلی نعیمہ کشور کے شوہر جے یو آئی کے مرکزی مجلس شوریٰ کے رکن و PK26سے سابق امیدوار صوبائی اسمبلی حاجی ملک کشور خان ایڈوکیٹ نے تحصیل تخت بھائی کے پارٹی عہدیداروں و یو سی امراء نائب ناظمین اقبال صافی، جاوید ٹھیکیدار، یو سی نرئی کے امیر مکمل شاہ، دامن کوہ کے امیر فضل واحد مجاہد، ساڑو شاہ کے امیر فضل ربی، گوجر گڑھی کے امیر حاجی زربادشاہ، یو سی ساڑو شاہ کے جنرل سیکرٹری جمیل خان، محمد ریاض، یاسین ملک، حضرت بلال اور سالار علی رحمان وغیرہ کے ہمراہ بتایا کہ خاتون رکن قومی اسمبلی نعیمہ کشور جو قومی اسمبلی کی مخصوص نشست پر منتخب ہوئی تھی لیکن انتہائی کم عرصے میں انہوں نے گیس، بجلی اور دیگر منصوبوں کی مد میں کروڑوں روپے فنڈز حکومت سے منظور کرا ئے ہیں، انہوں نے کہا کہ اس سے قبل انہوں نے اپنے مخصوصی فنڈ سے PK-26میں ساٹھ کلومیٹر فاصلے تک گیس فراہمی کے منصوبے کی منظوری کرائی تھی جس کا زیادہ تر کام مکمل ہو چکا ہے اور اب دوبارہ انہوں نے اپنے مخصوص فنڈ سےPK-26میں وفاقی حکومت سے مزید 60کلومیٹر فاصلے تک گیس منصوبے کی منظوری کرائی ہے ۔انہوں نے کہا کہ نعیمہ کشور نے بجلی کی مد میں بھی کروڑوں روپے فنڈ منظور کرایاہے اور ان کی کوششوں سے مختلف علاقوں میں بجلی کے دو سو سے زائد 200kv، 100kv اور 50kvٹرانسفارمرز سمیت نئی لائنوں کی تنصیب کی گئی ہے، انہوں نے مزید کہا کہ بیت المال فنڈز کی مد میں 3کروڑ روپے کی اشیائے ضروریہ سینکڑوں مستحقین میں تقسیم کی گئی ہیں جبکہ ہمارے درخواست پر نادرا کی موبائل وین ٹیم علاقے میں جگہ جگہ جا کر شناختی کارڈز سے محروم خواتین کو سہولیات فراہم کر رہے ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ نعیمہ کشور نے قومی اسمبلی کے فلور پر جمعیت اور علاقے کی بہتر نمائندگی کا فریضہ خوش اسلوبی سے ادا کیا ہے، حلال فوڈز اور ختم نبوتؐ ایکٹ کے مسئلے پر بھی انہوں نے مضبوط آواز اٹھائی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر