شانگلہ ،قتل میں ملوث خاتون شوہر سمیت گرفتار

شانگلہ ،قتل میں ملوث خاتون شوہر سمیت گرفتار

الپوری (ڈسٹرکٹ رپورٹر) شانگلہ پولیس کی کاروائی ۔لیلونئی مٹئی میں قتل کے مقدمے میں ملوث خاتون سمیت شو ہر گرفتار۔دونوں ملزمان نے اقبال جرم کردیا۔پیر کو عدالت میں پیشی کے بعد جیل منتقل کردیا گیا۔مختلف تھانوں کے حدود میں سرچ اینڈ سٹرائیک اپریشن کے نتیجے میں مفرور اشتہاریوں سمیت مشتبہ افراد حراست میں لیے گئے ہیں۔بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بر آمد۔کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دیں گے۔ ملزم جتنا بھی بااثر ہو قانون کے کٹھہرے میں لاکر کھڑا کردیں گے۔شانگلہ پولیس وقت کے ضرورت کے مطابق جدید آلات کے استعمال سے تحقیق کر رہی ہے ۔ لیلونئی مٹئی قتل کیس کو چوبیس گھنٹوں میں منطقی انجام تک پہنچا دیا، ملزمان نے علی رحمان نامی شخص کو قتل کرکے پہاڑی بالائی علاقے میں نعش کو پھینک دیا تھا ، تھانہ الپوری پولیس کو اطلاع ملی کہ مٹئی کے بالائی علاقے میں ایک نامعلوم نعش پڑی ہے جس پر شانگلہ پولیس نے سرکل پولیس افسر الپوری امجد علی خان کی سربراہی میں تحقیقاتی ٹیم تشکیل دیتے ہوئے تحقیقات کا اغاز کیا۔ان خیالات کا اظہار ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شانگلہ راحت اللہ خان نے پیر کے روز اپنے دفترمیں میڈیا نمائندوں کو تفصیلات بتاتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ مٹئی قتل کیس میں مقتول علی رحمن کا موبائیل ڈیٹا حاصل کرکے مختلف زاویوں پر تحقیقات شروع کرکے ملزمان کو گرفتار کرکے جنہوں نے عدالت میں اقبال جرم کردیا، جبکہ ملزمان عثمان غنی اور اس کی اہلیہ مسماۃ حاجرہ نے مل کر مقتول علی رحمن کو قتل کردیا تھا ، ان سے موبائیل فون ، ایک عدد پستول ، دس عدد کارتوس کا بر امد کیا گیا۔ ادھر مختلف اپریشنوں میں شانگلہ پولیس مفرور اشتہاریوں سمیت کئی مشتبہ افراد کو بھی گرفتار کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں ، جن سے بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بر امد کرکے قبضہ میں لئے گئے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر