نیب نے 56سرکاری کمپنیوں کے خلاف اب تک کیا کارروائی کی ہے ?تفصیلات کی طلبی کے لئے ہائی کورٹ میں درخواست دائر

نیب نے 56سرکاری کمپنیوں کے خلاف اب تک کیا کارروائی کی ہے ?تفصیلات کی طلبی کے ...
نیب نے 56سرکاری کمپنیوں کے خلاف اب تک کیا کارروائی کی ہے ?تفصیلات کی طلبی کے لئے ہائی کورٹ میں درخواست دائر

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)صاف پانی سمیت 56 کمپنیوں میں مبینہ کرپشن کا معاملہ نیب نے اب تک کیا تحقیقات کیں؟اکاﺅنٹنٹ جنرل پنجاب نے کمپنیوں سے متعلق کتنے آڈٹ مکمل کئے اورایف بی آر نے کمپنیوں کے ٹیکس ریٹرن سے متعلق کیا معلومات اکھٹی کیں ؟اب تک کی تمام تر چھان بین اور دستاویزات کو عدالتی ریکارڈ کا حصہ بنانے کے لئے لاہور ہائیکورٹ میں متفرق درخواست دائر کر دی گئی ہے ۔

درخواست شہری منیر احمد نے ایڈووکیٹ اظہر صدیق کی وساطت سے دائراس درخواست میں سیکورٹی ایکسچینج کمیشن پاکستان،آڈیٹر جنرل وفاق اور پنجاب ، ایف بی آراور نیب کو فریق بنایا گیا ہے ،درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ صاف پانی سمیت 56 کمپنیوں میں مبینہ کرپشن کے خلاف مقدمات لاہور ہائیکورٹ میں زیر سماعت ہے تاہم کرپشن کے انکشاف ہونے کے بعد نیب ،ایف بی آراور دیگر تحقیقاتی اداروں نے معاملے پر تحقیقات کاآغازکیا تھا درخواست میں قانونی نکتہ اٹھایا گیا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 19 (اے )کے تحت ہر شہری کو معلومات تک رسائی کا حق حاصل ہے تاہم تحقیقاتی اداروں کی جانب سے کرپشن پر کی گئی اب تک کی پیش رفت سے متعلق معلومات عوام کے سامنے نہیں رکھی گئیں جو بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے ۔درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ عدالت تحقیقاتی اداروں کی جانب سے اب تک کی گئی چھان بین اور دیگر اہم دستاویزات کو عدالت میں طلب کرتے ہوئے مقدمے کا ریکارڈ بنانے کا حکم دے ،درخواست میں محکمہ اینٹی کرپشن کی جانب سے تحقیقات کرنے پر اعتراض اٹھایا گیا ہے اور یہ موقف اختیار کیا گیا ہے کہ پنجاب حکومت کے ماتحت محکمہ اینٹی کرپشن میگا کرپشن اسکینڈل کی تحقیقات شفاف طریقے سے نہیں کر سکتا ،درخواست میں محکمہ اینٹی کرپشن کو تحقیقات سے روکنے اور کمپنیوں کے چیف ایکزیکٹیو کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی استدعا بھی کی گئی ہے۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں پر کلک کریں

مزید : لاہور