افغانستان ،طالبان اور سکیورٹی فورسز کے مابین جھڑپ ،دھماکہ ،44افراد ہلاک 45زخمی

افغانستان ،طالبان اور سکیورٹی فورسز کے مابین جھڑپ ،دھماکہ ،44افراد ہلاک ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کوہاٹ؍کابل(این این آئی) افغان مغربی صوبہ ہرات میں طالبان اورسیکیورٹی فورسز کے مابین خونریز جھڑپ کے دوران 10طالبان اور6پولیس اہلکاروں سمیت 16 افراد ہلاک اور8 طالبان اور10 پولیس اہلکاروں سمیت 18 زخمی ہوگئے۔پولیس ترجمان عبدالاحد ولی زادہ کے حوالے سے افغان میڈیا نے بتایا ہے کہ مغربی صوبہ ہرات کے ضلع پشتون زرغون کے علاقے زمان آباد میں طالبان نے پولیس چیک پوسٹ پرحملہ کیا جس کے نتیجے میں 6 پولیس اہلکارہلاک اور 10 دیگر زخمی ہوگئے جبکہ سیکیورٹی فورسز نے جوابی کاروائی کرتے ہوئے10 طالبان حملہ آوروں کو ہلاک کردیا جبکہ8 دیگر زخمی بھی ہوگئے۔افغان میڈیا کے مطابق طالبان نے ابھی تک واقعہ میں کوئی ردعمل ظاہر نہیں کیا ہے اور نہ ہی طالبان کی طرف سے کوئی بیان سامنے آیاہے۔جبکہ افغان دارالحکومت کابل کے نواحی ضلع پغمان میں خودکش بمبار نے افغان انٹیلی جنس اورفوجی گاڑی کو نشانہ بناکربارود سے بھری کارجاٹکرائی جس کے باعث زورداردھما کہ ہوا۔دھماکہ کے نتیجے میں سیکیورٹی فورسز کے 4اہلکاروں اور8 شہریوں سمیت 12 افراد ہلاک جبکہ6 اہلکاروں سمیت 9دیگر زخمی ہوگئے۔ افغان وزارت داخلہ کے ترجمان نجیب دانش کے مطابق یہ واقعہ منگل کے روزکابل کے شمال مغرب میں واقع ضلع پغمان کے علاقے بالاچنار میں مقامی وقت کے مطابق صبح تقریباً سوا نوبجے پیش آیا جہاں مبینہ طورپر ایک خودکش بمبار نے افغان انٹیلی جنس اورسیکیورٹی فورسز کی ایک گاڑی کو نشانہ بناکر بارود سے بھری کارٹکراد ی جس کے نتیجے میں ایک زوردار دھماکہ ہوا۔دھماکہ کی آوازدوردورتک سنائی دی۔ ترجمان کے مطابق دھماکہ کے نتیجے میں 12افراد جاں بحق اور9 دیگر زخمی ہوگئے۔ ترجمان دانش کے حوالے سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق جاں بحق افراد میں 4سیکیورٹی اہلکار اور دوخواتین اور دو بچوں سمیت 8 افغان شہری شامل ہیں جبکہ زخمیوں میں 6 سیکیورٹی اہلکار اور 3 شہری شامل ہیں۔اس واقعہ کی ذمہ داری طالبان نے قبول کرلی ہے۔
افغانستان جھڑپیں

مزید :

صفحہ آخر -