اسرائیل کی جیل میں 40 سالہ فلسطینی قیدی کا ایسا کارنامہ کہ بڑے بڑوں کو حیران کر دیا

اسرائیل کی جیل میں 40 سالہ فلسطینی قیدی کا ایسا کارنامہ کہ بڑے بڑوں کو حیران ...
اسرائیل کی جیل میں 40 سالہ فلسطینی قیدی کا ایسا کارنامہ کہ بڑے بڑوں کو حیران کر دیا

  



مقبوضہ بیت المقدس (ڈیلی پاکستان آن لائن)اسرائیلی جیل میں قید فلسطینی شہری نے نا مساعد اور مشکل حالات کے باوجود سیاسیات اور ابلاغیات کے مضامین میں گریجویشن کی ڈگری حاصل کی ہے۔

اطلاعات کے مطابق اسرائیلی جیلوں میں 40 سالہ معمر فتحی شریف ابو الشیخ شحرور نے قید کے دوران غزہ میں قائم الامہ اوپن یونیورسٹی میں داخلہ لیا تھا۔ اس نے کورس مکمل کرنے کے بعد امتحان دیا جس میں وہ اعلیٰ نمبروں سے کامیاب ہوئے۔انہوں نے سیاسیات اور ابلاغیات کے مضامین میں گریجویشن کی ڈگری حاصل کی۔خیال رہے کہ فتحی شحرور کو اسرائیلی فوج نے 9 مئی 2002ء کو طویل تعاقب کے بعد ان کے آبائی علاقے طولکرم سے حراست میں لیا۔ان پر اسرائیلی ریاست کے خلاف مزاحمتی کارروائیوں میں پیش پیش رہنے اور مشہور باراک حملے کے الزام میں مقدمہ چلایا گیا۔ ان مقدمات میں انہیں اسرائیلی عدالت کی طرف سے 29 بار عمر قید اور 20 سال اضافی قید کی سزا سنائی گئی۔گرفتاری کے بعد شحرور کو اسرائیلی فوج نے چار ماہ تک مختلف عقوبت خانوں میں وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔قید میں رہنے کے باوجود فلسطینی شہری کے حصول علم کاجذبہ ٹھنڈا نہیں ہوا اور نہ ہی وہ مایوس ہیں۔ طویل ترین قید کے باوجود وہ پرعزم اور پرامید ہیں۔ ان کے والد بھی حال ہی میں وفات پاگئے تھے مگر صہیونی حکام نے شحرور کو اپنے والد کے آخری دیدار اور جنازے میں شرکت کی اجازت بھی نہیں دی۔

مزید : بین الاقوامی