پنجاب میں غنڈوں اوربدمعاشوں نےباقاعدہ گینگ بنارکھےہیں،جماعت اسلامی کےتین کارکنوں کاخون ضائع نہیں جائے گا:سراج الحق

پنجاب میں غنڈوں اوربدمعاشوں نےباقاعدہ گینگ بنارکھےہیں،جماعت اسلامی کےتین ...
پنجاب میں غنڈوں اوربدمعاشوں نےباقاعدہ گینگ بنارکھےہیں،جماعت اسلامی کےتین کارکنوں کاخون ضائع نہیں جائے گا:سراج الحق

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیرجماعت اسلامی پاکستان سینیٹرسراج الحق نےکہاہےکہ پنجاب میں غنڈوں اوربدمعاشوں نےباقاعدہ گینگ بنارکھےہیں جومعصوم لوگوں کی عزتوں اورجانوں سےکھیل رہےہیں مگرحکومت بےبس اوریرغمال ہے،حکومت کی بےبسی کا یہ عالم ہےکہ اَب ہسپتالوں میں مریض بھی محفوظ نہیں رہے،جماعت اسلامی کے تین کارکنوں کا خون ضائع نہیں جائے گا،ہمارے کارکنوں کے قاتلوں کے خلاف مختلف تھانوں میں درجنوں مقدمات پہلے سے درج ہیں مگر ان کو گرفتار نہیں کیا گیا،اِن قاتلوں نے نہ صرف شہر کو بلکہ تھانوں کو بھی یرغمال بنا رکھا ہے ۔

ان خیالات کا اظہا رانہوں نے ننگل ساہداں مرید کے میں 7دسمبر کو عدالت میں پیشی کے بعد دن دیہاڑے قتل کئے گئے تین کارکنوں کے گھروں میں اظہار تعزیت کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرامیر جماعت اسلامی وسطی پنجاب محمد جاوید قصوری ،مرکزی سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف اور مقتولین کے خاندانوں کے افراد اور دیگر رشتہ دار بھی موجو دتھے ۔

سینیٹرسراج الحق نےکہاکہ پنجاب حکومت کی ناک کےنیچےدن دیہاڑے جی ٹی روڈ پرہمارے تین کارکنوں کوقتل کردیاگیامگرایک ہفتہ کےبعدبھی قاتل گرفتارنہیں ہوسکے جو پنجاب حکومت اور پولیس سمیت قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بدترین ناکامی اور نااہلی کا ثبوت ہے،جتھے بنا کر لوگوں کی عزتوں اورجانوں سے کھیلنے والے آزاد پھر رہے ہیں،مرید کے سمیت پنجاب کے بہت سے علاقوں کو نوگو ایریا بنا دیا گیا ہے،معاشرہ انتشار اور انارکی کا شکار ہے اورپولیس وی آئی پی ڈیوٹیاں کررہی ہے۔اُنہوں نےکہاکہ عوام کی جان و مال اور عزت و آبرو کا کوئی پرسان حال نہیں،حکومتی ذمہ داران،پولیس اورانتظامیہ کےافسران مقتولین کےخاندانوں ، علاقے کےعوام اورہماری قیادت سےقاتلوں کوجلدگرفتار کرنے کی یقین دہانیاں کرواتے ہیں مگرعملا ہاتھ پرہاتھ دھرے بیٹھے ہیں، پنجاب میں بدامنی اوربدانتظامی کی وجہ سے سڑکیں محفوظ ہیں نہ ہسپتال،غنڈہ گردی اور بدمعاشی کا راج ہے ۔

سینیٹر سراج الحق نےکہاکہ حکمران روزانہ رات کو سونے سےپہلےعوام کوسبز باغ دکھاتےہیں،عوام کےجان اورمال غیرمحفوظ ہیں،پنجاب میں لاکھوں پولیس اہلکار ہیں ،پولیس عوام کے بجائے وی آئی پیز کی خدمت پر مامور ہے،شہید کارکنوں کے چھوٹےچھوٹےمعصوم بچےاوربچیاں حکمرانوں سے سوال کررہے ہیں کہ انہیں والد کی شفقت سے کیوں محروم کردیا گیا ہے؟حکمران بتائیں کہ آپ اور کتنے لوگوں کے بچوں کو یتیم کروائیں گے؟۔انہوں نےحکمرانوں کوخبردارکیاکہ جماعت اسلامی پرامن اورقانون کااحترام کرنے والی جماعت ہے،ہم ظلم کرتے ہیں اور نہ ظلم کوپسند کرتے ہیں،صوبائی اورضلعی حکومت اورپولیس نےقاتلوں کی گرفتاری کیلئے ہمارے ضلعی ذمہ داران سے جو وعدے کئےہیں ان کو جلدازجلد پوراکیاجائے۔سینیٹر سراج الحق نے پنجاب وسطی کے امیر جاوید قصوری اور جے آئی یوتھ کے صدر شاہد نوید ملک کو مجرموں کی گرفتاری کیلئے پولیس اور انتظامیہ کے ساتھ مسلسل رابطے میں رہنے کی ہدایت کی اور کہا کہ ہم بھی اس معاملے کو ہر سطح پر اٹھائیں گے اور قاتلوں کی گرفتاری تک چین سے نہیں بیٹھیں گے ۔سینیٹر سراج الحق نے تینوں شہداءکے گھروں میں جاکران کے خاندانوں کے ساتھ اظہار تعزیت کیا ،فاتحہ خوانی کی اورانہیں ہر طرح کے تعاون کی یقین دہانی کروائی ۔ 

مزید : قومی