میچ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں کو سخت سزا ملنی چاہئے: شائقین کرکٹ

میچ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں کو سخت سزا ملنی چاہئے: شائقین کرکٹ

  

لاہور( سپورٹس رپورٹر)پاکستان کرکٹ ٹیم کے پی ایس ایل میں شامل کھلاڑیوں شرجیل خان اور نے میچ فکسنگ میں ملوث ہوکر پاکستان کا نام پوری دنیا میں بدنام کیا ہے اور ان کو سخت سے سخت سزا ملنی چاہئیے تاکہ مستقبل میں کوئی بھی کھلاڑی آئندہ کوئی ایسی حرکت نہ کرے پاکستان کی کرکٹ پہلے ہی بہت مسائل کا شکار ہے اس سے مزید مسائل بڑھیں گے ان خیالات کا اظہار مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد نے روز نامہ پاکستان سے خصوصی گفتگوکرتے ہوئے کیا اس حوالے سے نعیم اور عامر نے کہا کہ دونوں کھلاڑیوں کو فرنچائزڈ نے بھاری رقوم کے عوض ٹیم میں شامل کیا مگر اس کے باوجود ان کی لالچ ختم نہیں ہوئی یہ کھیل دشمن کھلاڑی ہیں اور ان کی اس حرکت سے بہت زیادہ بدنامی ہوئی ہے پاکستان کرکٹ بورڈ کو ان کے خلاف سخت کاروائی کرتے ہوئے ان کو عبرتناک سزا دینی چاہئیے اس حوالے سے عمیر اور بابر نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی کوتاہی کی وجہ سے ایسا ہوا ہے او ر بورڈ انتظامیہ کو اس جانب توجہ دینیہی کی ضر ورت تھی جس میں وہ ناکام ہوئے ابھی تو کہا جارہا ہے کہ اور بھی کھلاڑی میچ فکسنگ میں ملوث ہیں یہ بہت افسوس ناک بات ہے اوور اس سے لیگ کو بھی بہت نقصان ہوا ہے میچ فکسنگ سے پاکستان کرکٹ مزید نقصان کا شکار ہوگی عابد،پرویز اور نبیل نے بھی اس حواالے سے شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کو اس حوالے سے پہلے ہی اقدامات کرنے چاہئیے تھے مگر ضرورت اس بات کی ہے کہ اس سلسلے کو اب آگے نہیں بڑھنا چاہئیے ورنہ پی سی بی اور پاکستان کی مزید بدنامی ہوگی امید ہے کہ اب ان کی کڑی نگرانی کی جائے گی نازیہ،سائرہ اور آمنہ نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ بھی اس میں شامل ہے اور ان کے خلاف بھی کاروائی ہونی چاہئیے اور ان کھلاڑیوں کو اب کبھی بھی ٹیم میں شامل نہیں کرنا چاہئیے کیونکہ یہ ہمارے ملک کی بدنامی کاباعث بنے ہیں اور امید ہے کہ ان کو سخت سزا ملے گی ا ور آئندہ کوئی بھی کھلاڑی اس طرح کی حرکت نہیں کریگا اس حوالے سے گفتگوکرتے ہوئے ثاقب،سحرش،مومنہ اور نعیم نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی کوتاہی کی وجہ سے ایسا ہوا ہے او ر اس کے لئے اب ایسے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے کہ آئندہ کوئی ایسا کرنا کا کبھی سوچ بھی نہ سکے اور امید ہے کہ اس سلسلے میں اب مزید سخت اقدمات کئے جائیں گے،ہارون،عاقب اور بابرہ نے کہا کہ پاکستان کی بہت بدنامی ہوئی ہے اس لیگ صاف شفاف ہونا چاہئیے تھا تاکہ اس لیگ کی شہرت پوری دنیا میں ہوتی اور پاکستان کا نام روشن ہوتا مگر ایسا نہیں ہوسکا خرم او ر ثانیہ نے بھی اس حوالے سے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ اپنا کردارا د ا کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہوا ہے اور جو کچھ ہوا ہے اس میں وہ بھی برابر کا حصہ دار ہے اس کے خلاف بھی احتساب کیا جانا چاہئیے۔

مزید :

صفحہ آخر -