ٹرمپ ہمارے حکمرانوں کے اعصاب پر سوار ہو گیا ہے ،حافظ عاکف سعید

ٹرمپ ہمارے حکمرانوں کے اعصاب پر سوار ہو گیا ہے ،حافظ عاکف سعید

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)حافظ سعید کی نظر بندی اور ڈاکٹر شکیل آفریدی کی رہائی کے لیے مذاکرات بیرونی مداخلت کے آگے سرنگوں ہونا ہے۔ یہ بات تنظیم اسلامی کے امیر حافظ عاکف سعید نے اپنے ایک بیان میں کہی۔ اُنہوں نے کہا کہ معلوم ہوتا ہے کہ ڈونلڈٹرمپ ہمارے حکمرانوں کے اعصاب پر بُری طرح سوار ہو گیا اور وہ خوفزدہ ہو کر آئے دن ایسے اقدام کر رہے ہیں جن سے معلوم ہوتا ہے کہ ہم اپنے اندازِ غلامی میں مزید تیزی اور انکساری لا رہے ہیں اور پے درپے ایسے فیصلے کر رہے ہیں جن سے اُن کے منظور نظر بن جائیں اور اُن کے قہر سے بچ سکیں۔ گزشتہ ماہ چند بلاگرز کو اٹھانے اور پھر رہا کر دینے پر تبصرہ کرتے ہوئے اُنہوں نے کہا کہ اگرچہ اصولی طور پرتو ہم کسی بھی شہری کو غیر قانونی طور پر غائب کر دینے اور مقدمہ چلائے بغیر قید کرنے کے خلاف ہیں لیکن اس حوالہ سے بھی مقتدر قوتوں کا رویہ غیر مساوی اور غیر منصفانہ ہے۔ وہ لوگ جو ان قوتوں کے بقول اسلام کے حوالہ سے بنیاد پرست یا انتہا پسند ہیں اُنہیں جب اُچک لیا جاتا ہے تو سالوں کسی کو اُن کی خبر نہیں ہوتی اور اُن کے لواحقین کو ان کی کچھ خبر نہیں دی جاتی جبکہ اللہ اور رسول کی توہین کرنے والے ان بلاگرز کو چند ہفتوں بعد رہا کر دیا گیا۔ حالانکہ اُن کے خلاف توہین رسالت کے مقدمات اُن کی ویب سائٹ پر موجود مواد کی بنیاد پر قائم کیے جا سکتے تھے۔ اُنہوں نے کہا کہ اسلام سے قلبی تعلق رکھنے والے14 فروری کو ویلنٹائن ڈے کے حوالے سے ہونے والی فحاشی اور بے حیائی پر نوحہ کناں تھے کہ اب پاکستان نے پی ایس ایل کے نام پر جو دبئی میں کرکٹ کے مقابلے شروع کرائے ہیں اُس کے افتتاحی پروگرام میں جس قسم کی فحاشی اور عریانی بلکہ صحیح تر الفاظ میں بے غیرتی کا مظاہرہ کیا گیا ہے وہ ہر دردِ دل رکھنے والے مسلمان کے لیے انتہائی تکلیف دہ تھا۔ اُنہوں نے کہا کہ ایسی حرکات سے اللہ کے عذاب کو دعوت نہ دو۔ پہلے ہی مسلمانانِ پاکستان بڑی اذیت میں ہیں۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -