امریکہ میں دستاویزات نہ رکھنے والے تارکین وطن کیخلاف بڑا کریک ڈاﺅن شروع

امریکہ میں دستاویزات نہ رکھنے والے تارکین وطن کیخلاف بڑا کریک ڈاﺅن شروع
امریکہ میں دستاویزات نہ رکھنے والے تارکین وطن کیخلاف بڑا کریک ڈاﺅن شروع

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) امریکہ میں دستاویزات نہ رکھنے والے تارکین وطن کیخلاف بڑا کریک ڈاﺅن شروع کر دیا گیا، صدر ٹرمپ نے ویزا پابندی سے متعلق بھی حکم نامہ جاری کرنے کا فیصلہ کر لیا ۔

نواز شریف کے گزشتہ دور حکومت کے دوران میں نے خود جھوٹے سروے کرائے :شیخ رشید

امریکی میڈیا کے مطابق نیویارک، لاس اینجلس، اٹلانٹا، شکاگو، شمالی اور جنوبی کیرولائنا میں گھروں اور دفاتر پر چھاپے مارے گئے جن میں دستاویزات نہ رکھنے والے سینکڑوں تارکین وطن کو حراست میں لے لیا گیا۔ امریکی میڈیا کا کہنا تھا حراست میں لئے جانے والے امیگرنٹس میں ایسے افراد بھی شامل ہیں جن کا کوئی مجرمانہ ریکارڈ نہیں۔ دوسری جانب امریکی صدر نے7 مسلم ملکوں پر پابندی کا حکم نامہ معطل ہونے کے بعد امیگریشن سے متعلق نیا ایگزیکٹو آرڈر جاری کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ یہ نیا حکم نامہ ایک دو روز میں جاری کر دیا جائیگا۔ امریکی صدر نے کہا اپنے ملک کو محفوظ بنانے کے لیے جو ضروری ہوگا وہ کریں گے۔ امریکی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے سپریم کورٹ سے رجوع نہ کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔ ادھر لاطینی امریکہ کے درجن بھر ملکوں کے تارکین کو پکڑا گیا۔ تارکین وطن کے حقوق کے حامی کارکنوں نے بتایا گزشتہ دو دنوں کے دوران فلوریڈا، کنساس، ٹیکساس اور شمالی ورجینیا میں بھی چھاپے مارے گئے ہیں۔ لاس اینجلس میں آئی سی ای کے فیلڈ ڈائریکٹر نے بتایا 160 افراد گرفتار کئے گئے۔ حکام کے مطابق لاس اینجلس سے گرفتار 37 افراد کو میکسیکو بھیج دیا گیا ہے۔ اٹلانٹا میں امیگریشن وکیل صباغالب نے کہا گرفتاریوں سے پریشانی بڑھ رہی ہے۔ حکام گھر گھر جا کر دستاویزات طلب کر رہے ہیں، لوگ خوفزدہ ہیں۔امیگریشن کرسٹن سن نے کہا یہ چھاپے پیر کو شروع ہو کر جمعہ کی دوپہر تک جاری رہے اور امیگریشن پالیسی کو لاگو کرنے کیلئے معمول کی کارروائی تھی۔

مزید :

بین الاقوامی -