مساجد اور مدارس دنیا کی آبادی اور بقا کا ذریعہ ہیں، حنیف جالندھری

مساجد اور مدارس دنیا کی آبادی اور بقا کا ذریعہ ہیں، حنیف جالندھری

لاہور( پ ر ) ملک کے معروف دینی ادارہ جامعہ اشرفیہ لاہور کی مسجد حسن کے توسیعی منصوبہ کے سنگِ بنیاد کی تقریب منعقد ہوئی جس میں تبلیغی جماعت کے عالمی امیر حاجی عبدالوہاب اور سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق سمیت ملک بھر سے نامور دینی و علمی شخصیات نے شرکت کی جبکہ شیخ الاسلام مفتی محمد تقی عثمانی نے کراچی سے لاہور آنے والے جہاز کی تاخیر کی وجہ سے ٹیلی فون کے ذریعہ شرکاء سے خطاب کیا اس موقعہ پر حاجی عبدالوہاب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انسان جس مقصد کے لیے دنیا میں آیا ہے اس مقصد کو پورا کرنا کے لیے دین کی محنت کرے اور جامعہ اشرفیہ لاہور کی اس تقریب میں علالت کے باوجود میری شرکت میرے لئے سعادت کا باعث ہے ۔تقریب کے شرکا سے مہتمم حضرت مولانا حافظ فضل الرحیم،نائب مہتمم قاری ارشد عبید،حافظ اسعد عبید،حافظ اجود عبید، مولانا قاری محمد حنیف جالندھری ،مفتی تقی عثمانی،شیخ الحدیث مولانا انوار الحق، علامہ خالد محمود،مولانا محمود اشرف عثمانی، حاجی صغیر احمد،مولانا اسد تھانوی،مولانا عبدالقدوس ترمذی ، پروفیسر مولانا محمد یوسف خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مساجد و مدارس دنیا کی آبادی کی بقا کا ذریعہ ہیں عالم کفر کی طرف سے مساجد و مدارس کو مٹانے اور رکاوٹیں ڈالنے کی کوشش کے باوجود ان کی تعداد و توسیع میں اضافہ ہوتا چلا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جامعہ اشرفیہ لاہور کی تعمیر و ترقی اور اس کے علمی مقام میں حضرت مفتی محمد حسن ؒ ، مولانا رسول خانؒ ، مولانا محمد ادریس کاندھلویؒ ،مولانا مفتی جمیل احمد تھانوی،ؒ مولانا نورمحمودؒ ، مولانا محمد یعقوب خانؒ اور دیگر اکابرین کا خون پسینہ ان کی شبانہ روز کوشش و محنت اور اخلاص و تقویٰ کی بدولت آج پوری دنیا میں جامعہ اشرفیہ لاہور کا فیضان اور علم کی شمعیں روشن ہیں انہوں نے کہا کہ حکیم الامت مولانا اشرف علی تھانویؒ کی علمی تحریک و تصانیف اور ان کے نام پر قائم دینی مدارس آج برِصغیر پاک وہند میں جگہ جگہ نظر آرہے ہیں اس تحریک سے وابستہ علماء کرام دین کے ہر شعبہ و میدان میں نمایا خدمات سرانجام دیتے ہوئے نظر آتے ہیں تقریب میں خواجہ اعجاز احمد سکا،مولانا مشرف علی تھانوی،مولانا حافظ زبیر حسن، مولانا محمد اکرم کاشمیری، شیخ الحدیث مولانا زاہد الراشدی، مولانا قاری احمد میاں تھانوی، مولانا عبدالرؤف ملک،استاذ الحدیث مولانا عبدالرحیم چترالی، ڈاکٹر اویس احمد نقشبندی، مفتی شیر محمد علوی، مولانا محمد اسماعیل شجاع آبادی، مولانا عبدالرؤف فاورقی، مولانا محمد زاہد فیصل آباد، ڈاکٹر شہریار، عثمان پراچہ، عبدالعلیم خان،مولانا اسداللہ فاروق نقشبندی، استاد الحدیث مولانا محب النبی ، مولانا مسعود قاسم قاسمی ،ڈاکٹر فیاض احمد رانجھا،ڈاکٹر آصف جاہ، مولانا سرفراز اعوان، مولانا محمد عثمان،مولانا مفتی غلام مصطفی ،مولانا خلیل احمد تھانوی سمیت دیگر علماء ، اساتذہ اور طلبہ سمیت تمام شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ ہزاروں افراد نے شرکت کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4