’’پاکستان کے لیے دکھی دن ‘‘سوشل میڈیا پرعاصمہ جہانگیرکی وفات پر تعزیت

’’پاکستان کے لیے دکھی دن ‘‘سوشل میڈیا پرعاصمہ جہانگیرکی وفات پر تعزیت

اسلام آباد(اے این این)سوشل میڈیا پرانسانی حقوق کی رہنما عاصمہ جہانگیر کی موت پرتعزیت کا سلسلہ جاری رہا ۔ دنیا بھر سے لوگ اس سلسلے میں اپنے خیالات کا اظہار کر رہے ہیں۔بالی وڈ کے مشہور ہدایت کار مہیش بھٹ نے ٹویٹ کی ہے کہ غیر معمولی خاتون جو معمولی لوگوں کے لیے لڑتی رہیں۔ ملالہ یوسفزئی کے والد ضیاء الدین یوسفزئی نے ٹوئٹر پر لکھا ہے کہ انسانی حقوق کی علامت، جمہوریت کی چیمپئن آوازوں کی سب سے بلند آواز، سب سے بہادر عاصمہ جہانگیر۔پیپلز پارٹی کی رہنما ناز بلوچ نے لکھا ہے یہ پاکستان کے لیے دکھی دن ہے کہ اس دن اس نے بہادر اور بلند آواز عاصمہ جہانگیر کو کھو دیا۔اداکارہ ماہرہ خان نے لکھا: پاکستان کے لیے دکھی دن کہ آج اس نے عظیم فنکار اور ایک بیخوف کارکن کو کھو دیا۔ وہ اپنے کام میں ہمیشہ زندہ رہیں گے۔جنوبی ایشیائی تعاون کی تنظیم سارک کے اکاؤنٹ سے ایک ٹویٹ میں کہا گیا ہے کہ آپ ہمیشہ ہمارے دل و دماغ میں رہیں گی۔ناول نگار کاملہ شمسی نے لکھا: ہم انھیں کھونا برداشت نہیں کر سکتے۔صحافی اور مصنف رضا رومی نے کہا: ہم اکثر ایک جملہ کہتے ہیں: 'طاقت کے آگے سچی بات کہنا۔عاصمہ جہانگیر نے اس پر اپنی آخری سانس تک عمل کیا۔فیس بک پر بھی متعدد لوگ عاصمہ جہانگیر کے بارے میں خیالات کا اظہار کر رہے ہیں۔مصنف خضر حیات نے لکھا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ آج بڑے بڑے حادثوں کا دن ہے۔ پہلے قاضی واجد اور پھر عاصمہ جہانگیر۔ وقت بھی کس قدر ظالم شے کا نام ہے۔ بلا تفریق سب میں موت تقسیم کرتا جاتا ہے۔ نسانی حقوق کی کارکن ماروی سرمد نے لکھا کہ آج نہ صرف پاکستان بلکہ تمام جنوبی ایشیا عاصمہ جہانگیر کو روئے گا۔ صحافی مظہر عباس نے لکھا کہ مجھے اب بھی یاد ہے کہ عاصمہ جہانگیر نے ویج ایوارڈ کی جدوجہد کے دوران میڈیا کارکنوں کی بار بار مدد کی۔ جب اعتزاز احسن نے مقدمہ لڑنے سے انکار کر دیا تو عاصمہ نے آگے آ کر مقدمہ لڑا اور جیت گئیں۔

مزید : صفحہ آخر /میٹروپولیٹن 4