پاکستان نے 6ماہ میں 5ہزار راکٹ فائر کیے، سرحد پر ہزاروں تباہ ہو چکے: افغانستان کا الزام

پاکستان نے 6ماہ میں 5ہزار راکٹ فائر کیے، سرحد پر ہزاروں تباہ ہو چکے: ...

  



کابل(آئی این پی) افغان حکام نے الزام عائد کیا ہے کہ پاکستان کی جانب سے گزشتہ 6 ماہ میں افغانستان کی حدود میں مبینہ طور پر 5 ہزار سے زائد راکٹ فائر کیے گئے۔پاکستان کی سرحد سے متصل افغانستان کے صوبے کنڑ کے گورنر وحید اللہ کلیم زئی نے نجی چینل طلوع کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ڈیورنڈ لائن کے قریب راکٹ حملوں سے ہزاروں گھر تباہ ہو چکے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ افغانستان نے سفارتی سطح پر ہر مسئلے پر بات چیت کی ہے تاہم ہمیں بھی بھرپور جوابی کارروائی کا حکم دیا گیا ہے۔انہوں نے دعوی کیا کہ جس جگہ سے افغانستان پر راکٹ فائر ہوئے افغانستان کی سیکیورٹی فورسز نے بھی انہی مقامات کو جوابی کارروائی میں نشانہ بنایا۔دوسری جانب کنٹر پولیس چیف جنرل جمعہ گل حکمت نے دعوی کیا کہ راکٹ حملوں سے تقریبا 300 خاندان محفوظ مقامات پر نقل مکانی پر مجبور ہوئے۔

مزید : صفحہ آخر