مظفرآباد،عظیم حریت پسند شہید کشمیر مقبول بٹ کا 34واں یوم شہادت عقیدت و احترام سے منایا گیا

مظفرآباد،عظیم حریت پسند شہید کشمیر مقبول بٹ کا 34واں یوم شہادت عقیدت و ...

مظفرآباد(بیورورپورٹ)عظیم کشمیری حریت پسند عالمی شہرت یافتہ رہنما شہید کشمیر حضرت مقبول بٹ کا 34وایں یوم شہادت ریاست جموں و کشمیر کے دونوں اطراف انتہائی عقیدت و احترام ،نظریاتی جوش خروش ،ملی بیداری سے بھرپور انداز میں منایا گیا ،ریاست بھر میں جلسے جلوس ،ریلیاں ،احتجاجی مظاہرے کیے گئے ،کاروباری مراکز بند کر کے ہڑتال کی گئی ،شہید کشمیر حضرت مقبول بٹ کی عظیم قربانی کو پوری قوم کا متفقہ خراج عقیدت حصول آزادی تک جدوجہد کرنے کا عزم،عظیم کشمیری رہنماکی برسی کے موقع پر مرکزی ایوان صحافت میں ایک پروقار تقریب کا انعقاد کیا گیا جکی صدارت حریت کانفرنس کے رہنما سید شعیب شاہکی جبکہ کہ مہمان خصوصی پیپلز پارٹی کے رہنما شوکت جاویدمیرتھے ،تقریب سے محمد اسلم فارقی،حمزہ شاھین،شناط بٹ قاری بلال فاروقی نے خطاب کیا اس موقع پر مطالبہ کیا گیا کہ بھارت فوری طورپر حضرت مقبول بٹ شہید اور افضل گرو شہید کا جسد خاکی بلاتاخیر انکے جسد خاکہ کشمیریوں کو واپس کرے صدر تقریب سید شعیب شاہ نے کہا کہ حضرت مقبول بٹ شہید کشمیرقوم کی متفقہ قومی ہیرو اور رول ماڈل ہے انکو متنازعہ بناکر مفادات حاصل کرنے والوں کو پوری قوم جانتی ہے اب وہ بے نقاب ہو چکے ہیں وہ ایک قوم پرست آزادی پسند رہنما تھے انکے نام اور نظرئیے کو غلط رنگ دینے والوں کا انکے ساتھ کو ئی تعلق نہیں بلکہ وہ تحریک کونقصان پہنچا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ جب تک مقبوضہ کشمیر آزادی کی نعمت حاصل نہیں کرسکتا ہماری جدوجہد میدان عمل میں رہے گی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مشتاق السلام نے کہا کہ بھارت نے تحریک آزادی کو طاقت کے بل بوتے دباتے دباتے پر کشمیری بچے کو مقبول بٹ شہید کے آزادی پسند نظرئیے کامحافظ بنادیا ہے جو آزادی کی نوید اور بھارت کی تباہی کا پیغام ہے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شوکت جاوید میرنے کہا کہ حکومت نے شہید کشمیر حضرت مقبول بٹ کو قومی ہیرو قرار دیکر سرکاری سطع پر برسی منانے کا اعلان اور یاد گار تعمیر کرنے کا وعدہ کیا تھا وہ کس نے ہوامیں تحلیل کر کے قومی شہید کے ساتھ مزاق کر کے قوم کی توہین اور حکومتکی اتھارٹی چیلنج کی اسکی فوری تحقیقات کر کے بے نقاب کیاجائے تقریب کے احتتام پر شہید کشمیر حضرت مقبول بٹ سمیت شہدائے کشمیر اور تحریک آزادی کے لیے دعا کی گئی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول