وائٹ ہاﺅس میں تعینات اہلکار پر اپنی ہی اہلیہ نے جنسی زیادتی کا الزام لگادیا، پھر اہلکار نے کیا کیا؟ انتہائی حیران کن خبرآگئی

وائٹ ہاﺅس میں تعینات اہلکار پر اپنی ہی اہلیہ نے جنسی زیادتی کا الزام لگادیا، ...
وائٹ ہاﺅس میں تعینات اہلکار پر اپنی ہی اہلیہ نے جنسی زیادتی کا الزام لگادیا، پھر اہلکار نے کیا کیا؟ انتہائی حیران کن خبرآگئی

  



واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکی حکام کے مطابق وائٹ ہائوس تقاریر لکھنے کیلئے تعینات اہل کار نے گھریلو تشدد کے واقعات اور الزامات پر استعفیٰ دے دیا۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کی جانب سے جاری رپورٹس کے مطابق وائٹ ہائوس میں تعینات اہل کار نے بیوی کی جانب سے گھریلو تشدد اور زیادتی کا الزام عائد کیا تھا، جس کے بعد اطلاعات منظر عام پر آنے کے بعد اہل کار نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بطور صدر عہدہ سنبھالنے کے بعد یہ وائٹ ہائوس کا دوسرا اہل کار ہے جس نے گھریلو تشدد اور زیادتی کے الزام پر استعفیٰ دیا۔وائٹ ہائوس کے نائب ترجمان راج شاہ کا کہنا ہے کہ انہیں ڈیوڈ سورینسین کے خلاف واقعات کی اطلاعات کا علم جمعرات کی شام کو ہوا، جس پر ڈیویڈ سے رابطہ کیا گیا، جس پر اس نے بیوی کی جانب سے عائد تمام الزامات کی تردید اور استعفیٰ کی تصدیق کی ہے۔

مزید : بین الاقوامی