ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس، سپریم کورٹ نے ایف بی آر سے عطا الحق قاسمی کے 10 سالہ گوشوارے طلب کر لئے

ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس، سپریم کورٹ نے ایف بی آر سے عطا الحق قاسمی کے 10 ...
ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس، سپریم کورٹ نے ایف بی آر سے عطا الحق قاسمی کے 10 سالہ گوشوارے طلب کر لئے

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس میں سپریم کورٹ نے ایف بی آرسے عطاالحق قاسمی کے 10سالہ گوشوارے طلب کرلیے۔چیف جسٹس آف پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اصلاحات کاوقت آگیاہے،جہاں جہاں غلطیاں ہوئی ہیں اصلاح کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق ایم ڈی وی تعیناتی کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثارنے استفسار کیا کہ عطاالحق قاسمی نے تنخواہ کی مدمیں کتنی رقم وصول کی؟، سیکرٹری اطلاعات نے بتایا کہ عطاالحق قاسمی کی تنخواہ 15 لاکھ تھی،ساڑھے 3 کروڑ روپے تنخواہ 2 سال میں وصول ہوئی۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ ساڑھے 3 لاکھ روپے میڈیکل اخراجات ہیں،سفری اخراجات 10لاکھ روپے ہیں،چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ عطاالحق قاسمی کومہنگی کاردی گئی،گاڑی کی دیکھ بھال کے اخراجات کس قانون کے تحت دیئے گئے؟۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ لاکھوں روپے پٹرول کی مد میں وصول کئے گئے،عطاالحق قاسمی کوسرکاری گھرمیں لفٹ بھی لگواکردی گئی،یہ ساری باتیں تحقیقات میں سامنے آجائیں گی۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ اگریہ رقم زیادہ ہوئی توسب کوبھرنی پڑے گی،جس نے تقرری کی ہے سب سے رقم وصول کریں گے،چیف جسٹس ثاقب نثارنے کہا کہ 2 سال میں 24 لاکھ روپے کے اخراجات تفریح کی مدمیں ہیں۔

دوران سماعت چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ لاہور کے کیمپ آفس میں کتنے اخراجات آئے؟،سیکرٹری اطلاعات نے بتایا کہ 11 لاکھ روپے کیمپ آفس کے اخراجات آئے۔

عدالت نے ایف بی آرسے عطاالحق قاسمی کے 10سالہ گوشوارے طلب کرلیے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد