مجھے وہ بندہ چاہئے جسے عطاالحق قاسمی کے نام کاخیال آیا،چیف جسٹس ثاقب نثار، سابق ایم ڈی پی وی کے پروگرام کا ریکارڈ طلب

مجھے وہ بندہ چاہئے جسے عطاالحق قاسمی کے نام کاخیال آیا،چیف جسٹس ثاقب نثار، ...
مجھے وہ بندہ چاہئے جسے عطاالحق قاسمی کے نام کاخیال آیا،چیف جسٹس ثاقب نثار، سابق ایم ڈی پی وی کے پروگرام کا ریکارڈ طلب

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ عطاالحق قاسمی کے نام کاخیال یاخواب کیسے آیا؟،مجھے وہ بندہ چاہئے جسے عطاالحق قاسمی کے نام کاخیال آیا۔

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ کیا پی ٹی وی کے ڈائریکٹر کےلئے کوئی اہلیت ہے؟،کیاکابینہ سے ڈائریکٹرز کی تعیناتی کی منظوری لی گئی۔

ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ چیئرمین کی تقرری کی منظوری وزیراعظم نے دی،وزیراعظم نے یہ منظوری بطور چیف ایگزیکٹودی۔

اس پرجسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ بورڈکوبتایاگیاوزیراعظم عطاالحق قاسمی کوچیئرمین لگاناچاہتے ہیں۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ جس شخص نے عطاالحق قاسمی کانام پیش کیااس کابھی بتادیں۔عدالت نے عطاالحق قاسمی کے پروگرام کی ویڈیوبھی منگوا لیں،ساتھ ہی عدالت عظمیٰ نے کہا کہ پی ٹی وی بورڈمیٹنگ کاریکارڈبھی منگوا لیں اورعطاالحق قاسمی کی تنخواہ کس نے مقرر کی یہ بھی منگوالیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ دیکھنا ہے پروگرام میں کون سے کھوئے ہوئے گوہرنایاب ڈھونڈے گئے،بورڈ کے الیکشن دکھادیں جس میں چیئرمین منتخب کیاگیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد