29سالہ کنواری لڑکی حاملہ ہوگئی، عقل کو دنگ کردینے والی خبر آگئی

29سالہ کنواری لڑکی حاملہ ہوگئی، عقل کو دنگ کردینے والی خبر آگئی
29سالہ کنواری لڑکی حاملہ ہوگئی، عقل کو دنگ کردینے والی خبر آگئی

  



اوٹاوا(نیوز ڈیسک) میڈیکل سائنس کی ترقی جدید دور کے انسان کو نجانے کس سمت لے کر جا رہی ہے۔ صدیوں سے عورت اور مرد کا شادی کی صورت میں استوار ہونے والا تعلق ہی حصول اولاد کی بنیاد تھا لیکن اب خواتین مرد کی قربت کے بغیر بھی اولاد پیدا کرنے کے لئے کوشاں ہیں۔ کینیڈا سے تعلق رکھنے والی 29 سالہ لڑکی لارن بھی ایک ایسی ہی انوکھی مثال ہے جس کا کہنا ہے کہ وہ مردوں میں کوئی دلچسپی نہیں رکھتی اور کبھی کسی مرد کے قریب گئی ہے لیکن اس کے باوجود حاملہ ہو چکی ہے۔

میل آن لائن کے مطابق لارن نے اولاد کی خواہش پوری کرنے کے لئے ایک سپرم ڈونر کی خدمات حاصل کیں، یعنی کسی نامعلوم مرد کی جانب سے عطیہ کیا گیا سپرم استعمال کیا اور حاملہ ہو گئی۔ جون میں اس کے ہاں بچے کی پیدائش متوقع ہے۔ لارن کا کہنا ہے کہ وہ خود کو کنواری ماں قرار دیتی ہے اور اپنے بچے کی پیدائش کے بعد بھی ساری عمر کنواری ہی رہنا پسند کرے گی۔

اپنے عجیب و غریب فیصلے کے متعلق بات کرتے ہوئے اس کا کہنا تھا”میں پیدائشی طور پر ’ہائپو پچوریزم‘ نامی بیماری کی شکار ہوں۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ میرے جسم میں ہارمونز کا توازن درست نہیں ہے اور بیضہ دانی و دیگر تولیدی اعضاءکو ہارمونز مناسب طور پر نہیں پہنچتے۔ یہی وجہ تھی کہ میری بلوغت کا آغاز بھی بہت تاخیر سے ہوا۔ شاید میری یہ جسمانی کیفیت بھی میری ذہنی کیفیت پر اثر انداز ہوئی اور مجھے کبھی مردوں میں دلچسپی محسوس نہیں ہوئی۔ اس کے باوجود مجھے بچوں میں ہمیشہ سے دلچسپی رہی ہے اور میں ماں بننے کی خواہشمند تھی۔ایسی صورت میں میرے لئے سب سے اچھی آپشن یہی تھی کہ کسی ڈونر سے سپرم لے کر حاملہ ہوجاﺅں، اور میں نے ایسا ہی کیا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس