باپ سے منشیات خریدنے والے 16 سالہ نوجوان نے 6سالہ بیٹی کوریپ کے بعد قتل کردیا، بچی غائب ہوئی توباپ کیا شرمناک کام کررہاتھا؟ انتہائی افسوسناک تفصیلات

باپ سے منشیات خریدنے والے 16 سالہ نوجوان نے 6سالہ بیٹی کوریپ کے بعد قتل کردیا، ...
باپ سے منشیات خریدنے والے 16 سالہ نوجوان نے 6سالہ بیٹی کوریپ کے بعد قتل کردیا، بچی غائب ہوئی توباپ کیا شرمناک کام کررہاتھا؟ انتہائی افسوسناک تفصیلات

  

ایڈنبرگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) سکاٹ لینڈ میں ایک 6 سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کردیا گیا۔ واقعہ گزشتہ برس جولائی میں پیش آیا تھا جس کے کیس کی سماعت کے دوران انکشاف ہوا کہ جس 16 سالہ ملزم نے بچی سے زیادتی کی وہ بچی کے باپ سے منشیات خریدتا تھا۔ جب بچی غائب ہوئی تو اس کا باپ اپنی محبوبہ کے ساتھ گھر پر بیٹھا فحش فلمیں دیکھ رہا تھا۔

گزشتہ برس 2 جولائی کو سکاٹ لینڈ میں جنگلوں سے ایک 6 سالہ بچی الیشا میک فیل کی لاش برآمد ہوئی تھی۔ بچی کے ساتھ جنسی زیادتی اور قتل کے الزام میں 16 سالہ نوجوان کو گرفتار کیا گیا ہے۔ منگل کے روز کیس کی سماعت کے دوران مقتولہ بچی کے 26 سالہ والد رابرٹ نے عدالت کو بتایا کہ جب ان کی بیٹی تین ماہ کی تھی اسی وقت اس کی الیشا کی ماں سے علیحدگی ہوگئی تھی۔ جس رات واقعہ پیش آیا اس رات وہ اپنی 6 سالہ بیٹی کو اس کے کمرے میں چھوڑ کر اپنے کمرے میں آگیا اور اپنی گرل فرینڈ ٹونی لوئس کے ساتھ فحش فلم دیکھنا شروع کردی۔ رابرٹ نے عدالت کو بتایا کہ وہ بچی کی گمشدگی سے مکمل طور پر لاعلم تھا ، اسے اگلی صبح اس کے والدین الیشا کی گمشدگی سے متعلق آگاہ کیا۔

رابرٹ نے عدالت میں انکشاف کیا کہ وہ ملزم کو جانتا ہے اور اسے منشیات فروخت کرتا رہا ہے۔ ”جس رات وقوعہ ہوا اس رات بھی ملزم نے مجھے فیس بک پر منشیات کیلئے لاتعداد میسجز کیے ، اس کی بہن کے فیس بک اکاﺅنٹ سے بھی مجھے پیغامات ملے“۔رابرٹ نے عدالت کو بتایا کہ وہ ملزم اور اس کی بہن کو منشیات فروخت کیا کرتا تھا لیکن اس نے تین ماہ پہلے ملزم کی ماں کی مداخلت پر اسے منشیات دینا بند کردی تھیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /انسانی حقوق /برطانیہ